امریکا:کوروناریلیف فنڈ سے لیمبور گینی،مہنگی اشیاء خریدنےپر شہری کو 9سال قید

lbrgeni.jpg


امریکا میں کورونا سے متاثرہ افراد کیلئے ریلیف فنڈ قائم کیا گیا تو وہاں بھی گھپلے کرنے اور بڑے بڑے ہاتھ مارنے والے سرگرم ہو گئے اور ایک شخص نے ڈیڑھ ملین ڈالر سے زائد کا فراڈ کیا، لیکن جب مہنگی گاڑیاں اور گھڑیاں خریدی تو پکڑا گیا۔

امریکی ریاست ہیوسٹن شہری نے کورونا ریلیف فنٹ سے 1.6 ملین ڈالرز کا فراڈ کیا جس پر اسے 9 سال کی قید سنا دی گئی، برطانوی خبر رساں ادارے انڈیپنڈنٹ کے مطابق 30 سالہ امریکی سیاہ فام شہری نے 28 کروڑ روپے سے کی رقم کورونا فنڈ کی مد میں حاصل کی جس سے بعد ازاں مہنگی چیزیں خریدنے لگا۔


پرائیس نامی اس 30 سالہ جوان نے 2 لاکھ ڈالرز کی لیمبرگینی، 85 ہزار ڈالر کا فورڈ پک اپ ٹرک اور 14 ہزار کی رولیکس گھڑی خریدی۔ جس پر تحقیقات کی گئیں تو پتہ چلا کہ اس نے 1.6 ملین ڈالر وصول کرنے سے پہلے 2.6 ملین ڈالر قرض کی درخواست بھی دی تھی۔

ROL-768x488.jpg


ملزم نے ایف بی آئی کے سامنے ستمبر میں وائر فراڈ اور منی لانڈرنگ کے الزامات کا اعتراف کیا تھا جب اس نے پے چیک پروٹیکشن پروگرام میں قرض کے لیے درخواست دی۔ مگر یاد رہے کہ امریکا میں ریلیف فنڈ سسٹم سے فائدہ اٹھانے والا یہ پہلا کیس نہیں۔

امریکی محکمہ انصاف کے مطابق فراڈ ڈویژن نے 95 سے زیادہ فوجداری مقدمات میں 150 سے زیادہ افراد کے خلاف مقدمہ چلایا ہے اور دھوکہ دہی کے فنڈز سے 75 ملین ڈالرز سے زائد رقم ضبط کی گئی ہے۔
 
Advertisement

no_handle_

MPA (400+ posts)
اگر کچھ لگا بھی دیتا تو وزیراعظم بننے کا حقدار ٹھہرتا۔
 
Sponsored Link