ایف بی آر نے پی آئی اےکے منجمدبینک اکاؤنٹس بحال کر دیئے

frbb11211.jpg


لاہور: فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے قومی ایئرلائن کے منجمد کیے گئے اکاؤنٹس کو غیر منجمد کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سی ای او پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز کی یقین دہانیوں پر ایف بی آر نے فوری اقدام کرتے ہوئے پی آئی اے کے منجمد کیے گئے اکاؤنٹس کو غیر منجمد کر دیا۔ یہ پیش رفت سی ای او پی آئی اے ارشد ملک کی چیئرمین ایف بی آر ڈاکٹر اشفاق کے درمیان ہونے والی ملاقات کے بعد سامنے آئی ہے۔

ارشدملک کا کہنا ہے کہ پی آئی اے نامساعدحالات کے باوجود واجبات ادائیگی کرتی رہےگی بقایاجات ادائیگی کیلئےحکومت سےکابینہ فیصلےکےتحت رہنمائی لی جائے گی۔

ترجمان پی آئی اے کا بیان پر کہنا تھا کہ ٹیکس کی مطلوب رقم 2016 سے 2020 تک کی ہے، جب کہ اس ضمن میں کابینہ کا اصلاحات تک 2016 سے 2020 کی رقم منجمد رکھنے کا فیصلہ موجود ہے۔ ایف بی آر کا اکاؤنٹ منجمد کرنے کا فیصلہ وفاقی کابینہ کے فیصلے سے متضاد ہے۔

واضح رہے کہ ایف بی آر (وفاقی بورڈ آف ریونیو) نے قومی ایئر لائن (پی آئی اے) کے بینک اکاؤنٹس منجمد کر دیئے تھے۔پی آئی اے نے 2 سال سے ٹکٹ پر وصول فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی جمع نہیں کرائی جس پر ادارے اکاؤنٹس منجمد کیے گئے۔

ایئر لائن نے فیڈرل ایکسائزڈیوٹی کی مد میں50 اعشاریہ 4 ارب ادا کرنے ہیں۔ ملک بھر میں پی آئی اے کے 50 اکاؤنٹس منجمد کیے ہیں اور اس عمل سے 46 کروڑ 50 لاکھ روپے ریکور کر لیے گئے ہیں۔


خبر رساں ادارے کا یہ بھی کہنا ہے کہ پی آئی اے کے اکاؤنٹس 4 ارب روپے ٹیکس ریکوری تک منجمد ہی رہیں گے۔
 
Advertisement
Last edited by a moderator:
Sponsored Link