برطانیہ: کورونا ڈیلٹا ویریئنٹ کی نئی قسم کے حملے ، ماہرین متحرک

uk.jpg


برطانیہ میں ڈیلٹا ویرینٹ کی قسم ’AY 4 .2ّ کے حملے، ماہرین متحرک

برطانیہ میں کورونا ڈیلٹا ویرینٹ کی نئی قسم ’AY 4 .2ّ‘ کے حملے شروع ہوگئے،نئے کیسز کا چھ فیصد اس قسم کے کورونا وائرس کا شکار ہے، طبی ماہرین نے نگرانی شروع کردی، گزشتہ چوبیس گھنٹے میں دو سو تیئیس افراد ہلاک، اور چوالیس ہزار افراد متاثر ہوئے۔

یونیورسٹی کالج لندن جینیٹکس انسٹی ٹیوٹ کے ڈائریکٹر فرانکوئس بلوکس کے مطابق AY.4.2 " کے دس فیصد زیادہ منتقل ہونے کا امکان ہے، یہ ڈیلٹا کی طرح زیادہ خطرناک نہیں،جو کہ الفا سے کم از کم 50 فیصد زیادہ متعدی تھا،انہوں نے کہا کہ AY.4.2 کی متعدی بیماری کی منتقلی میں اضافے پر تحقیق کررہے ہیں۔


AY.4.2 اب بھی بڑی حد تک برطانیہ تک محدود ہے اور اس کی تشویش کی ایک قسم کے طور پر درجہ بندی نہیں کی گئی ہے،پروفیسر بلوکس نے کہا کہ AY.4.2 میں منتقلی کی صلاحیت ڈیلٹا کے مقابلے میں کم ہے، اس کی منتقلی میں 10 فیصد اضافہ زیادہ منتقلی کا باعث نہیں بن سکتا، نہ ہی یہ برطانیہ میں کیسوں کی تعداد میں حالیہ اضافے کی وجہ نہیں بن رہا ہے۔

یوکے ہیلتھ سیکورٹی ایجنسی میں کووڈ 19 کے حادثے کے ڈائریکٹر ڈاکٹر نے کہا کہ ہم سارس-سی او وی -2 میں جینومک تبدیلیوں کی نگرانی اور تحقیقات جاری رکھتے ہیں اور صحت عامہ کے لیے مناسب اقدامات کرتے ہیں،دوسری جانب نیدرلینڈز میں رواں ہفتے کورونا کے نئے کیسز میں 44 فیصد اضافہ جاری ہے۔
 
Advertisement
Sponsored Link