بس میں مسافر خاتون سے زیادتی، ملزم گرفتار

Untitled.png

راجن پور کی تحصیل جام پور کے قریب بھکر سے کراچی جانے والی بس میں کنڈکٹر کی 30 سالہ خاتون سے زیادتی، ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق راجن پور کی تحصیل جام پور کے قریب بھکر سے کراچی جانے والی بس میں کنڈکٹر نے 30 سالہ شازیہ نامی خاتون کو زیادتی کا نشانہ بنایا، پولیس نے واقعے کی تصدیق
کرتے ہوئے بتایا کہ ملزم کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ خاتون کے بس سے نہ اترنے پر ایک مسافر نے شک کی بناء پر بس کے اندر جاکر دیکھا اور کنڈکٹر کو زیادتی کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔

پولیس ذرائع کے مطابق 30 سالہ شازیہ نامی خاتون مسافر بس میں بھکر سے کراچی کیلئے اکیلے سفر کر رہی تھی۔ بس میں سوار دیگر چھ مسافر اتر کر ہوٹل چلے گئے جبکہ خاتون بس میں ہی موجود رہی تو خاتون کو اکیلے بس میں دیکھ کر کنڈیکٹر سلیم نے زیادتی کا نشانہ بنایا۔‘ خاتون کی شکایت پر بس کنڈکٹر کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا گیا ہے جبکہ میڈیکل ٹیسٹ میں خاتون سے زیادتی ثابت ہوگئی ہے اور ملزم نے اعتراف جرم بھی کر لیا ہے۔

وزیراعلٰی پنجاب حمزہ شہباز نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے ملوث شخص کے خلاف کارروائی کے احکامات جاری کر دیئے ہیں۔

واضح رہے کہ دوران سفر خواتین کے ساتھ زیادتی کے واقعات میں اضافہ ہوتا جا رہا ہے، گذشتہ ماہ زکریا ایکسپریس میں ملتان سے کراچی جاتے ہوئے ایک خاتون کا ٹرین میں گینگ ریپ کیا گیا تھا۔ زکریا ایکسپریس ایک نجی کمپنی کے تحت چلتی ہے اور ریپ میں اسی ٹرین کے تین ملازمین شامل تھے جنہیں گرفتار کرکے میڈیکل ٹیسٹ کروانے پر زیادتی کی تصدیق ہوئی تھی، ملزمان کے خلاف کارروائی جاری ہے۔
 
Advertisement

nasir77

Chief Minister (5k+ posts)
NEUTRAL SIRF EK HE HAI JO SARI AWAM KA RAPE SARAY AAM KER RAHA HAI, AUR LOG NAAM LAYTAY HOWAY DERTAY HAIN !!!! BIG Bs (BAJA & BANDIAL)
 

khalilqureshi

Senator (1k+ posts)
Why chief minister order action for it. Isn't it police responsibility to inquire and arrest culprit. Only SHOBDABAZI
 

Mughal1

Chief Minister (5k+ posts)
jis mulk main drust qanoon hi na ho ya us per theek tarah se amal hi na kiya jaaye wahaan per agar log apni hifaazat khud nahin karen ge to yahee kuchh ho ga keh aisa hi mutawaqe hai. issi liye to awaam ko jaagne aur munaasib iqdamaat uthaane ki zaroorat hai agar woh apne liye amno amaan chahte hen. warna bhugtate rahen her tarah ke zulmo sitam akele akele. jo log aik qowm nahin bante aur apni azaadi ke liye mar mitne ke liye tayaar nahin hote ghulaami hi un ka muqaadar hoti hai. islam yahee sikhjaata hai namaaz roze nahin jo insaan ke kisi kaam ke nahin hen aur na hi ho sakte hen. See HERE. asal kharaabi ki jard logoon ka zehni tor per mazhabi aur secular hona yani bedeeno beimaan hona hai.
 
Last edited:

Choudhry ji

MPA (400+ posts)
These wild dogs should be hanged in public ... but he will be on bail after one week & victim will be frighten by him ... or she will be forced by CHOUDHRY of area to take handsome amount & next time it will not be in bus but at proper place with increased money ....LANAT HEY ASI ISLAMI MUMLIKAT PER .
 

Bubber Shair

Chief Minister (5k+ posts)
زیادتی اتنے آرام سے کیسے ہورہی تھی کوی شور شرابا نہیں ہوا ، کوی چیخ تو سکتا ہے ایسے موقع پر مگر یہ کیا بات ہوی کہ بس ایک ہوٹل پر رکی مسافر چاے پینے نیچے اترے مگر خاتون نہیں اتری تو اندر جاکر چیک کیا وہاں کنڈیکٹر خاتون کے ساتھ زیادتی میں مصروف تھا
بحرحال سزا تو اسے ملے گی مگر یہ واقعہ تھوڑا سا مشکوک ہے میں نے ہمیشہ ایسے واقعات پر مظلوم کا ساتھ دیا ہے اس میں بھی خاتون کے ساتھ ہوں مگر مجھے یہ بات پسند نہیں آی کہ زیادتی ایک بس میں ہورہی ہے جسکے مسافر ابھی ایک منٹ پہلے اترے ہیں تاکہ چاے پی کر پھر روانہ ہوں ،ایک بندہ اور خاتون نہیں اترے ، کسی اور نے شک ہونے کی بنا پر اندر جاکر دیکھا تو کنڈیکٹر زیادتی کررہا تھا مجھے دکھ ہے کہ اتنا بڑا واقعہ ہورہا ہے اور آپ تھوڑی بہت مزاحمت بھی نہ کرسکیں
 
Sponsored Link