دعا زہرہ کیس کی تحقیقات پر کتنے اخراجات آچکے ہیں؟ تحقیقات ابھی بھی جاری

1duazehrakhrca.jpg

لاہور میں پسند کی شادی کرنے والی کراچی کی لڑکی دعا زہرا کے مقدمہ اغوا، پنجاب میں تلاش، بازیابی، عدالت میں پیشیوں اور میڈیکل کرانے کے سلسلے میں سندھ پولیس کے اب تک 30 لاکھ روپے کے اخراجات آچکے ہیں اور تحقیقات کا سلسلہ ابھی بھی جاری ہے۔

جیو نیوز کے مطابق کراچی میں دعا زہرا کے اغوا کے مقدمے کی تفتیش کے سلسلے میں عدالتی احکامات پر پولیس کی کئی ہفتوں تک ملک بھر میں دوڑیں لگی رہیں، پنجاب بھر میں چھاپے مارے جاتے رہے۔ کراچی سے ڈی آئی جی سی آئی اے، اے وی سی سی کے ایس ایس پیز اور دیگر پولیس افسران کی ٹیمیں لاہور، اسلام آباد، کشمیر اور کے پی بھیجی گئیں۔


تفتیشی ٹیموں کو متعدد بار لاہور میں ہفتوں قیام کرایا گیا، ایک پولیس ٹیم مانسہرہ میں 20 دن تک قیام پذیر رہی، جبکہ پولیس کی ایک ٹیم آزاد کشمیر بھی بھیجی گئی۔ ایس ایس پیز پنجاب آتے جاتے رہے، ڈی آئی جی سی آئی اے دو مرتبہ پنجاب گئے اوراسلام آباد میں بھی کراچی پولیس کا پڑاؤ رہا۔

گزشتہ ہفتے تک کی کارروائیوں میں پولیس افسران کے سب سے زیادہ اخراجات کراچی سے مختلف شہروں کے دوطرفہ ہوائی سفر پر آئے ہیں۔ اس سلسلے میں جون کے آخری ہفتے تک کراچی پولیس کے 25 لاکھ تک کے اخراجات آچکے تھے جن میں سے آئی جی سندھ کی جانب سے 20 لاکھ سے زائد کی ادائیگی کی جاچکی ہے۔

عدالتی حکم پر دعا زہرا کے کراچی میں دوبارہ میڈیکل کے سلسلے میں بھی ہوائی سفر اور قیام و طعام کے لاکھوں کے اخراجات آ رہے ہیں۔ تاہم مقدمے کے تفتیشی افسر کی جانب سے ابھی تک کاسٹ آف انویسٹی گیشن کا بل داخل نہیں کیا گیا۔

تفتیشی افسر کے سفری اخراجات کے علاوہ میڈیکل رپورٹس، فارنزک اور دیگر اخراجات کا بھی تخمینہ لگایا جا رہا ہے جو کہ لاکھوں میں ہے۔
 
Advertisement

akinternational

Minister (2k+ posts)
Lakh laanat iss dua bhagori awarah aur iske ashna per..... iss kanjri aur iske ashiq ko dafa kar do... court aur idaron ko aur koi kaam nahin awam ka oaisa aur waqt iss gashti per barbad kar rahe hain...
 

Visionartist

Minister (2k+ posts)
1duazehrakhrca.jpg

لاہور میں پسند کی شادی کرنے والی کراچی کی لڑکی دعا زہرا کے مقدمہ اغوا، پنجاب میں تلاش، بازیابی، عدالت میں پیشیوں اور میڈیکل کرانے کے سلسلے میں سندھ پولیس کے اب تک 30 لاکھ روپے کے اخراجات آچکے ہیں اور تحقیقات کا سلسلہ ابھی بھی جاری ہے۔

جیو نیوز کے مطابق کراچی میں دعا زہرا کے اغوا کے مقدمے کی تفتیش کے سلسلے میں عدالتی احکامات پر پولیس کی کئی ہفتوں تک ملک بھر میں دوڑیں لگی رہیں، پنجاب بھر میں چھاپے مارے جاتے رہے۔ کراچی سے ڈی آئی جی سی آئی اے، اے وی سی سی کے ایس ایس پیز اور دیگر پولیس افسران کی ٹیمیں لاہور، اسلام آباد، کشمیر اور کے پی بھیجی گئیں۔


تفتیشی ٹیموں کو متعدد بار لاہور میں ہفتوں قیام کرایا گیا، ایک پولیس ٹیم مانسہرہ میں 20 دن تک قیام پذیر رہی، جبکہ پولیس کی ایک ٹیم آزاد کشمیر بھی بھیجی گئی۔ ایس ایس پیز پنجاب آتے جاتے رہے، ڈی آئی جی سی آئی اے دو مرتبہ پنجاب گئے اوراسلام آباد میں بھی کراچی پولیس کا پڑاؤ رہا۔



گزشتہ ہفتے تک کی کارروائیوں میں پولیس افسران کے سب سے زیادہ اخراجات کراچی سے مختلف شہروں کے دوطرفہ ہوائی سفر پر آئے ہیں۔ اس سلسلے میں جون کے آخری ہفتے تک کراچی پولیس کے 25 لاکھ تک کے اخراجات آچکے تھے جن میں سے آئی جی سندھ کی جانب سے 20 لاکھ سے زائد کی ادائیگی کی جاچکی ہے۔

عدالتی حکم پر دعا زہرا کے کراچی میں دوبارہ میڈیکل کے سلسلے میں بھی ہوائی سفر اور قیام و طعام کے لاکھوں کے اخراجات آ رہے ہیں۔ تاہم مقدمے کے تفتیشی افسر کی جانب سے ابھی تک کاسٹ آف انویسٹی گیشن کا بل داخل نہیں کیا گیا۔

تفتیشی افسر کے سفری اخراجات کے علاوہ میڈیکل رپورٹس، فارنزک اور دیگر اخراجات کا بھی تخمینہ لگایا جا رہا ہے جو کہ لاکھوں میں ہے۔

What is your interest here? should the govt not spend on a crime investigation?
 
Sponsored Link