عمران خان معیشت کو درست سمت میں چلارہے تھے، ماہر معیشت ڈاکٹر اشفاق حسن

8drashfaqhassineconmy.jpg

ماہر معشیت ڈاکٹر اشفاق حسین نے کہا کہ عمران خان کے دور میں معیشت بہتری کی راہ پر گامزن تھی اب تو وہ سب ڈی ریل ہو گیا ٹرین پٹری سے اتر چکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم معیشت کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ عمران خان کے دور میں تباہ ہو گئی معیشت، خدا کا خوف کریں وہ نمبرز تو دیکھیں جو اس دور کے دوران سامنے آئے ہیں۔ مارچ کے مہینے 27 فیصد صنعت کو فروغ ملا اور صرف جولائی سے لیکر مارچ تک گزرنے والے مہینوں میں دس فیصد سے زیادہ ہے۔

ڈاکٹر اشفاق حسین نے کہا کہ ایوب خان کے دور میں 60 کی دہائی کے دوران وہ وقت جسے صنعت کیلئے سنہری دور کہا جاتا ہے یہ تو اس دور سے بھی بہتر صورتحال تھی۔


ان کا کہنا تھا کہ دیکھیں نجی شعبے میں جی ڈی پی کی شرح 12 سال سے سب سے زیادہ ہے۔ برآمدات کو دیکھیں تو دس مہینوں کا 29 بلین ڈالر ہے۔ اسی مالی سال کے دوران یہ 31، 32 بلین ڈالر تک پہنچ جائے گا۔

انہوں نے کہا جی ڈی پی کی شرح 5 اعشاریہ 5 فیصد سے بھی زیادہ ہو گی اور ترسیلات زر بھی 32، 33 بلین ڈالر پر ہوں گی جو کہ اب تک کا سب سے زیادہ ہو گا۔

سابق دور حکومت کے دوران ملکی معیشت پر تجزیہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عمران خان کے دور میں معاشی بہتری کی پٹری پر ہماری معیشت جا رہی تھی اس پر آپ اختلاف کر سکتے ہیں کوئی کہے گا سپیڈ 15 تھی کوئی کہے گا 30 کلومیٹر فی گھنٹہ تھی مگر ٹرین آگے تو بڑھ رہی تھی۔
 
Advertisement

Arshak

Senator (1k+ posts)
The prostitutes in haramkhor media who work for Goon League(for financial and other benefits) launched a sustained campaign against PTI.The haramkhors kept the same mantra of high prices for three years and ignored everything else.PTI did a lot of good things despite difficult circumstances.
 

Modest

Chief Minister (5k+ posts)
Kash kuch loago mein thori aqal hoti aur adventure karne se pehle ye sab facts and figures dekhte.
Ab tou imported Hukumat ke zariye aik maheenay mein tabahi pher di.
 

miafridi

Prime Minister (20k+ posts)
Noon leak is known to ruin economy not to build it.

On the contrary PTI not only took bold/unpopular decisions but all economic indicators Like Revenue collection, exports, remittances, job creation, GDP etc went into positive as well.

امپورٹڈ_حکومت_نامنظور
 

A.jokhio

Minister (2k+ posts)
8drashfaqhassineconmy.jpg

ماہر معشیت ڈاکٹر اشفاق حسین نے کہا کہ عمران خان کے دور میں معیشت بہتری کی راہ پر گامزن تھی اب تو وہ سب ڈی ریل ہو گیا ٹرین پٹری سے اتر چکی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہم معیشت کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہتے ہیں کہ عمران خان کے دور میں تباہ ہو گئی معیشت، خدا کا خوف کریں وہ نمبرز تو دیکھیں جو اس دور کے دوران سامنے آئے ہیں۔ مارچ کے مہینے 27 فیصد صنعت کو فروغ ملا اور صرف جولائی سے لیکر مارچ تک گزرنے والے مہینوں میں دس فیصد سے زیادہ ہے۔

ڈاکٹر اشفاق حسین نے کہا کہ ایوب خان کے دور میں 60 کی دہائی کے دوران وہ وقت جسے صنعت کیلئے سنہری دور کہا جاتا ہے یہ تو اس دور سے بھی بہتر صورتحال تھی۔


ان کا کہنا تھا کہ دیکھیں نجی شعبے میں جی ڈی پی کی شرح 12 سال سے سب سے زیادہ ہے۔ برآمدات کو دیکھیں تو دس مہینوں کا 29 بلین ڈالر ہے۔ اسی مالی سال کے دوران یہ 31، 32 بلین ڈالر تک پہنچ جائے گا۔

انہوں نے کہا جی ڈی پی کی شرح 5 اعشاریہ 5 فیصد سے بھی زیادہ ہو گی اور ترسیلات زر بھی 32، 33 بلین ڈالر پر ہوں گی جو کہ اب تک کا سب سے زیادہ ہو گا۔

سابق دور حکومت کے دوران ملکی معیشت پر تجزیہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عمران خان کے دور میں معاشی بہتری کی پٹری پر ہماری معیشت جا رہی تھی اس پر آپ اختلاف کر سکتے ہیں کوئی کہے گا سپیڈ 15 تھی کوئی کہے گا 30 کلومیٹر فی گھنٹہ تھی مگر ٹرین آگے تو بڑھ رہی تھی۔
why Pak progress is reversed?...we Pakistanis have move forward of these corrupt n criminal dynastic mafias of shareefs n zardaris... we dont want them ...they r anti Pak criminal...they dont represent us... help us get rid of them..
 
Sponsored Link