مریم نواز کی بریت این آر او 2 قرار، پی ٹی آئی رہنماؤں کا سخت ردعمل

pti-maryam-nawaz-ihc-rlf-ihc.jpg


ایون فیلڈ ریفرنس میں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف کی بریت پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنماؤں نے سخت ردعمل دیتےہوئے اسے این آراو 2 قرار دیدیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کی جانب سے مریم نواز شریف کو ایون فیلڈ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا کالعدم قرار دیتے ہوئے بری کرنے کے فیصلے پر ردعمل آنے کا سلسلہ جاری ہے۔

پاکساتان تحریک انصاف کے رہنماؤن نے اس معاملےپر سخت ردعمل دیتے ہوئے اسے این آر او 2 قرار دیدیا ہے۔

پی ٹی آئی کے سینئر رہنما فواد چوہدری نے کہا کہ جج صاحبان یہ بتائیں کہ اربوں کےلندن فلیٹس جن میں شریف فیملی برسوں سے رہائش پزیر ہے کس کی ملکیت ہیں؟


سابق وفاقی وزیر علی زیدی نے کہا کہ این آر او 2 پر عمل درآمد ہوگیا، دنیا جانتی ہے کہ عمران خان کو دفتر سے کیوں ہٹایا گیا۔


مراد سعید نے اس معاملےپر ایک ویڈیو بیان جاری کیا اور کہا کہ امریکی سازش کے تحت منتخب حکومت ہٹائی گئی، اربوں کی کرپشن معاف،مفرور و اشتہاری اسحاق ڈار کی واپسی ہوئی۔ اور اب آگے اسی پلان کے تحت سند یافتہ چور، مفرور و اشتہاری نواز شریف کی واپسی ہوگی اور عمران خان کی نا اہلی بھی ہے۔


قومی اسمبلی کے سابق ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری نے کہا کہ اربوں روپے مالیت کے فلیٹس کا مالک کون ہے؟


اظہر مشہوانی نے کہا کہ 1992 میں مہنگے ٹھیکے دےکر نوازشریف نے لندن میں فلیٹس خریدے جو 2016 کی پاناما لیکس میں مریم نواز کی ملکیت نکلے، واضح ثبوتوں کے باوجود یہ لوگ تین دہائیوں سے ڈیلیں کرکے ملک پر مسلط ہوجاتےہیں۔


خیبر پختونخوا کے وزیر آئی ٹی و سائنس عاطف خان نے کہا کہ ہمارا جوڈیشل سسٹم کسی امیر طاقتور کو گرفتار نہیں کرسکتا، اگر ہمارا سسٹم مضبوط ہوتا تو اشتہاری ڈار واپس آکر اس ملک کا وزیر خزانہ نا بنتا بلکہ باقی بہت سے وفاقی وزراء سمیت جیل کی سلاخوں کےپیچھے ہوتے، یہی معاملہ مریم نواز شریف کے ساتھ بھی ہوتا جنہیں آج باعزت بری کردیا گیا۔


تحریک انصاف سندھ کے ترجمان ارسلان تاج نے چلیں اب تو لوگ کھل کر کہیں گے سہولت کاروں نے چوروں کو این آر او ٹو دے دیا ہے اور چوروں کے ساتھ سمجھوتا کر لیا ہے۔
 

arifkarim

Prime Minister (20k+ posts)
pti-maryam-nawaz-ihc-rlf-ihc.jpg


ایون فیلڈ ریفرنس میں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز شریف کی بریت پر پاکستان تحریک انصاف کے رہنماؤں نے سخت ردعمل دیتےہوئے اسے این آراو 2 قرار دیدیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائی کورٹ کی جانب سے مریم نواز شریف کو ایون فیلڈ ریفرنس میں 7 سال قید کی سزا کالعدم قرار دیتے ہوئے بری کرنے کے فیصلے پر ردعمل آنے کا سلسلہ جاری ہے۔

پاکساتان تحریک انصاف کے رہنماؤن نے اس معاملےپر سخت ردعمل دیتے ہوئے اسے این آر او 2 قرار دیدیا ہے۔

پی ٹی آئی کے سینئر رہنما فواد چوہدری نے کہا کہ جج صاحبان یہ بتائیں کہ اربوں کےلندن فلیٹس جن میں شریف فیملی برسوں سے رہائش پزیر ہے کس کی ملکیت ہیں؟


سابق وفاقی وزیر علی زیدی نے کہا کہ این آر او 2 پر عمل درآمد ہوگیا، دنیا جانتی ہے کہ عمران خان کو دفتر سے کیوں ہٹایا گیا۔


مراد سعید نے اس معاملےپر ایک ویڈیو بیان جاری کیا اور کہا کہ امریکی سازش کے تحت منتخب حکومت ہٹائی گئی، اربوں کی کرپشن معاف،مفرور و اشتہاری اسحاق ڈار کی واپسی ہوئی۔ اور اب آگے اسی پلان کے تحت سند یافتہ چور، مفرور و اشتہاری نواز شریف کی واپسی ہوگی اور عمران خان کی نا اہلی بھی ہے۔


قومی اسمبلی کے سابق ڈپٹی اسپیکر قاسم سوری نے کہا کہ اربوں روپے مالیت کے فلیٹس کا مالک کون ہے؟


اظہر مشہوانی نے کہا کہ 1992 میں مہنگے ٹھیکے دےکر نوازشریف نے لندن میں فلیٹس خریدے جو 2016 کی پاناما لیکس میں مریم نواز کی ملکیت نکلے، واضح ثبوتوں کے باوجود یہ لوگ تین دہائیوں سے ڈیلیں کرکے ملک پر مسلط ہوجاتےہیں۔


خیبر پختونخوا کے وزیر آئی ٹی و سائنس عاطف خان نے کہا کہ ہمارا جوڈیشل سسٹم کسی امیر طاقتور کو گرفتار نہیں کرسکتا، اگر ہمارا سسٹم مضبوط ہوتا تو اشتہاری ڈار واپس آکر اس ملک کا وزیر خزانہ نا بنتا بلکہ باقی بہت سے وفاقی وزراء سمیت جیل کی سلاخوں کےپیچھے ہوتے، یہی معاملہ مریم نواز شریف کے ساتھ بھی ہوتا جنہیں آج باعزت بری کردیا گیا۔


تحریک انصاف سندھ کے ترجمان ارسلان تاج نے چلیں اب تو لوگ کھل کر کہیں گے سہولت کاروں نے چوروں کو این آر او ٹو دے دیا ہے اور چوروں کے ساتھ سمجھوتا کر لیا ہے۔
پی ٹی آئی کی بہادر قیادت کا چوروں لٹیروں کو این آر او ۲ ملنے پر بھرپور احتجاج
C3BAF660-363A-4F1E-86D4-7015BEFA5F58.jpeg
CD6C251A-87D5-4CFB-BCCE-7B1812A02B2C.jpeg
 
Sponsored Link