ن لیگ کا جمائماکےگھر کے باہراحتجاج کااعلان،جمائما اور حامد میر آمنے سامنے

3jemimahousenlprotest.jpg

مسلم لیگ ن کی جانب سے اتوار کے روز دوپہر ایک بجے عمران خان کی سابق اہلیہ جمائما گولڈ اسمتھ کے گھر کے باہر احتجاج کے اعلان پر پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے جمائما نے کہا کہ انہیں ایسا لگتا ہے کہ یہ 90 کی دہائی کا وہی لاہور بن گیا ہے۔


جمائما نے کہا کہ میرے بچوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے اور سوشل میڈیا پر بھی یہود مخالف مہم چلائی جا رہی ہے۔

اس حوالے سے انہوں نے مسلم لیگ ن کے کارکنوں کی جانب سے احتجاج میں شرکت کیلئے بنایا گیا دعوت نامہ شیئر کیا جس پر ان کے چاہنے والوں نے پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے اسے غلط قرار دیا جبکہ پاکستانی سوشل میڈیا صارفین اس پر معذرت کرتے نظر آئے۔





صحافی کامران خان نے کہا کہ جمائما بی بی کا کیا قصور اس وقت لندن میں انکے گھر کو ن لیگی کارکنوں نے گھیرے میں لے لیا ہے۔ جمائما اور ان کے صاحبزادوں کا عمران خان سے آجکل رسمی تعلق بھی شائد نہیں ہے۔


ان کا کہنا تھا کہ جمائما جن کو یہودی خاندان سے نسبت پر بھی نشانہ بنایا جارہا ہے مناسب عمل نہیں نواز شریف صاحب ہی جمائما کو بچائیں۔

جب کہ حامد میر نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کو لندن میں نوازشریف کے گھر کے باہر احتجاج روکنا چاہیے اور مسلم لیگ ن کو بھی چاہیے کہ وہ اس سے باز رہے۔ جو خود شیشے کے گھر میں رہتا ہو اسے دوسرے پر پتھر نہیں پھینکنا چاہیے۔


حامد میر کے اس ٹویٹ پر جمائما نے بھی نہیں سخت ردعمل دیا اور کہا کہ ان کا اور ان کے بچوں کا پاکستانی سیاست سے کوئی تعلق نہیں۔


جس کے بعد حام میر نے پھر کہا کہ ان کے بھائی نے پاکستانی سیاست میں مداخلت کی۔ جس جمائما نے جواب دیا کہ وہ اپنے سابق شوہر اور بھائی کے کاموں کی جوابدہ نہیں۔


حامد میر نے ایک اور ٹویٹ شیئر کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے بیٹے نے اپنے انکل کیلئے الیکشن مہم چلائی۔ جس پر جمائمانے انہیں شٹ اپ کال دیتے ہوئے کہا کہ وہ اس کی ہالی ڈے جاب تھی اور وہ اس وقت ٹین ایجر تھا۔


یاد رہے کہ اس حوالے سے مسلم لیگ ن کے متعدد رہنما بھی کہہ چکے ہیں کہ وہ جمائما کے گھر کے باہر احتجاج کیلئے جا رہے ہیں۔ ویڈیو اسکینڈل کے مشہور کردار ناصر بٹ نے کہا کہ چونکہ وہ یہاں احتجاج کیلئے آ رہے ہیں اس لیے ہم وہاں جائیں گے۔


عابد شیر علی نے بھی اعلان کیا کہ یہ احتجاج کیا جا رہا ہے تاکہ عمران خان کے بچوں کو بھی پتہ چلے۔

مسلم لیگ برطانیہ کے صدر زبیر گل نے بھی کارکنوں سے اپیل کی کہ وہ اتوار کے روز ایک بجے جمائما گولڈاسمتھ کی رہائشگا ہے باہر پہنچ جائیں۔


مسلم لیگ ن برطانیہ کے سیکرٹری جنرل راشد ہاشمی نے کہا کہ مورخہ 17 اپریل 2022 مسلم لیگ ن برطانیہ کے زیرِ اہتمام عمران خان کے بچوں اور سابقہ اہلیہ جمائما کے لندن میں واقع گھر کے باہر آٹا چوری، چینی چوری، دوائی اسکینڈل، توشہ خانہ اور فارن فنڈنگ کیس سمیت علیمہ خان، بشری بی بی اور اس کی فرنٹ پرسن فرح گجر کی کرپشن کے خلاف پُرامن احتجاج کیا جا رہا ہے۔

 
Advertisement

Aliimran1

Chief Minister (5k+ posts)
جو یہ سمجھتے ہیں کہ سازش نہیں ہوئی —- مداخلت ہوئی ہے
ان کے لئے عرض ہے
یہ ایک گالی ہے ——- یہ ایسا ہی ہے —— جیسے کہا جائے
“ تیری ماں چوداں —— اور مہذب طریقے سے کہا جائے
“ تیری ماں کے ساتھ سویئں
فیصلہ آپ کریں کہیہ گالی نہیں ہے —- تو بندیال من سور سب
کی ماں بہن کے ساتھ پورا پاکستان سوۓ
 

Arshak

Minister (2k+ posts)
The British Home Secretary has a lot of powers now.They can deport anyone to his parent’s country of origin if his or her parents were not born in UK.These idiots have no reason to protest outside Jemima’s house who is a British citizen and is not involved in Pakistani politics.
 

Citizen X

President (40k+ posts)
Chootiyon ka tola! 😂 😂 😂 😂
Sar katti murghi ti tarah idhar udhar bhaag rahe hai, kuj samaj nahi aa rahi burnol kahan se mili gi!
 

Hunter1

Senator (1k+ posts)
3jemimahousenlprotest.jpg

مسلم لیگ ن کی جانب سے اتوار کے روز دوپہر ایک بجے عمران خان کی سابق اہلیہ جمائما گولڈ اسمتھ کے گھر کے باہر احتجاج کے اعلان پر پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے جمائما نے کہا کہ انہیں ایسا لگتا ہے کہ یہ 90 کی دہائی کا وہی لاہور بن گیا ہے۔


جمائما نے کہا کہ میرے بچوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے اور سوشل میڈیا پر بھی یہود مخالف مہم چلائی جا رہی ہے۔

اس حوالے سے انہوں نے مسلم لیگ ن کے کارکنوں کی جانب سے احتجاج میں شرکت کیلئے بنایا گیا دعوت نامہ شیئر کیا جس پر ان کے چاہنے والوں نے پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے اسے غلط قرار دیا جبکہ پاکستانی سوشل میڈیا صارفین اس پر معذرت کرتے نظر آئے۔





صحافی کامران خان نے کہا کہ جمائما بی بی کا کیا قصور اس وقت لندن میں انکے گھر کو ن لیگی کارکنوں نے گھیرے میں لے لیا ہے۔ جمائما اور ان کے صاحبزادوں کا عمران خان سے آجکل رسمی تعلق بھی شائد نہیں ہے۔


ان کا کہنا تھا کہ جمائما جن کو یہودی خاندان سے نسبت پر بھی نشانہ بنایا جارہا ہے مناسب عمل نہیں نواز شریف صاحب ہی جمائما کو بچائیں۔

جب کہ حامد میر نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کو لندن میں نوازشریف کے گھر کے باہر احتجاج روکنا چاہیے اور مسلم لیگ ن کو بھی چاہیے کہ وہ اس سے باز رہے۔ جو خود شیشے کے گھر میں رہتا ہو اسے دوسرے پر پتھر نہیں پھینکنا چاہیے۔


حامد میر کے اس ٹویٹ پر جمائما نے بھی نہیں سخت ردعمل دیا اور کہا کہ ان کا اور ان کے بچوں کا پاکستانی سیاست سے کوئی تعلق نہیں۔


جس کے بعد حام میر نے پھر کہا کہ ان کے بھائی نے پاکستانی سیاست میں مداخلت کی۔ جس جمائما نے جواب دیا کہ وہ اپنے سابق شوہر اور بھائی کے کاموں کی جوابدہ نہیں۔


حامد میر نے ایک اور ٹویٹ شیئر کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے بیٹے نے اپنے انکل کیلئے الیکشن مہم چلائی۔ جس پر جمائمانے انہیں شٹ اپ کال دیتے ہوئے کہا کہ وہ اس کی ہالی ڈے جاب تھی اور وہ اس وقت ٹین ایجر تھا۔


یاد رہے کہ اس حوالے سے مسلم لیگ ن کے متعدد رہنما بھی کہہ چکے ہیں کہ وہ جمائما کے گھر کے باہر احتجاج کیلئے جا رہے ہیں۔ ویڈیو اسکینڈل کے مشہور کردار ناصر بٹ نے کہا کہ چونکہ وہ یہاں احتجاج کیلئے آ رہے ہیں اس لیے ہم وہاں جائیں گے۔


عابد شیر علی نے بھی اعلان کیا کہ یہ احتجاج کیا جا رہا ہے تاکہ عمران خان کے بچوں کو بھی پتہ چلے۔

مسلم لیگ برطانیہ کے صدر زبیر گل نے بھی کارکنوں سے اپیل کی کہ وہ اتوار کے روز ایک بجے جمائما گولڈاسمتھ کی رہائشگا ہے باہر پہنچ جائیں۔


مسلم لیگ ن برطانیہ کے سیکرٹری جنرل راشد ہاشمی نے کہا کہ مورخہ 17 اپریل 2022 مسلم لیگ ن برطانیہ کے زیرِ اہتمام عمران خان کے بچوں اور سابقہ اہلیہ جمائما کے لندن میں واقع گھر کے باہر آٹا چوری، چینی چوری، دوائی اسکینڈل، توشہ خانہ اور فارن فنڈنگ کیس سمیت علیمہ خان، بشری بی بی اور اس کی فرنٹ پرسن فرح گجر کی کرپشن کے خلاف پُرامن احتجاج کیا جا رہا ہے۔


i think its time to bring Hamid Mir family in pictures
and each n every member of plmn leadership with their pictures
 

Hunter1

Senator (1k+ posts)
3jemimahousenlprotest.jpg

مسلم لیگ ن کی جانب سے اتوار کے روز دوپہر ایک بجے عمران خان کی سابق اہلیہ جمائما گولڈ اسمتھ کے گھر کے باہر احتجاج کے اعلان پر پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے جمائما نے کہا کہ انہیں ایسا لگتا ہے کہ یہ 90 کی دہائی کا وہی لاہور بن گیا ہے۔


جمائما نے کہا کہ میرے بچوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے اور سوشل میڈیا پر بھی یہود مخالف مہم چلائی جا رہی ہے۔

اس حوالے سے انہوں نے مسلم لیگ ن کے کارکنوں کی جانب سے احتجاج میں شرکت کیلئے بنایا گیا دعوت نامہ شیئر کیا جس پر ان کے چاہنے والوں نے پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے اسے غلط قرار دیا جبکہ پاکستانی سوشل میڈیا صارفین اس پر معذرت کرتے نظر آئے۔





صحافی کامران خان نے کہا کہ جمائما بی بی کا کیا قصور اس وقت لندن میں انکے گھر کو ن لیگی کارکنوں نے گھیرے میں لے لیا ہے۔ جمائما اور ان کے صاحبزادوں کا عمران خان سے آجکل رسمی تعلق بھی شائد نہیں ہے۔


ان کا کہنا تھا کہ جمائما جن کو یہودی خاندان سے نسبت پر بھی نشانہ بنایا جارہا ہے مناسب عمل نہیں نواز شریف صاحب ہی جمائما کو بچائیں۔

جب کہ حامد میر نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی کو لندن میں نوازشریف کے گھر کے باہر احتجاج روکنا چاہیے اور مسلم لیگ ن کو بھی چاہیے کہ وہ اس سے باز رہے۔ جو خود شیشے کے گھر میں رہتا ہو اسے دوسرے پر پتھر نہیں پھینکنا چاہیے۔


حامد میر کے اس ٹویٹ پر جمائما نے بھی نہیں سخت ردعمل دیا اور کہا کہ ان کا اور ان کے بچوں کا پاکستانی سیاست سے کوئی تعلق نہیں۔


جس کے بعد حام میر نے پھر کہا کہ ان کے بھائی نے پاکستانی سیاست میں مداخلت کی۔ جس جمائما نے جواب دیا کہ وہ اپنے سابق شوہر اور بھائی کے کاموں کی جوابدہ نہیں۔


حامد میر نے ایک اور ٹویٹ شیئر کرتے ہوئے کہا کہ آپ نے بیٹے نے اپنے انکل کیلئے الیکشن مہم چلائی۔ جس پر جمائمانے انہیں شٹ اپ کال دیتے ہوئے کہا کہ وہ اس کی ہالی ڈے جاب تھی اور وہ اس وقت ٹین ایجر تھا۔


یاد رہے کہ اس حوالے سے مسلم لیگ ن کے متعدد رہنما بھی کہہ چکے ہیں کہ وہ جمائما کے گھر کے باہر احتجاج کیلئے جا رہے ہیں۔ ویڈیو اسکینڈل کے مشہور کردار ناصر بٹ نے کہا کہ چونکہ وہ یہاں احتجاج کیلئے آ رہے ہیں اس لیے ہم وہاں جائیں گے۔


عابد شیر علی نے بھی اعلان کیا کہ یہ احتجاج کیا جا رہا ہے تاکہ عمران خان کے بچوں کو بھی پتہ چلے۔

مسلم لیگ برطانیہ کے صدر زبیر گل نے بھی کارکنوں سے اپیل کی کہ وہ اتوار کے روز ایک بجے جمائما گولڈاسمتھ کی رہائشگا ہے باہر پہنچ جائیں۔


مسلم لیگ ن برطانیہ کے سیکرٹری جنرل راشد ہاشمی نے کہا کہ مورخہ 17 اپریل 2022 مسلم لیگ ن برطانیہ کے زیرِ اہتمام عمران خان کے بچوں اور سابقہ اہلیہ جمائما کے لندن میں واقع گھر کے باہر آٹا چوری، چینی چوری، دوائی اسکینڈل، توشہ خانہ اور فارن فنڈنگ کیس سمیت علیمہ خان، بشری بی بی اور اس کی فرنٹ پرسن فرح گجر کی کرپشن کے خلاف پُرامن احتجاج کیا جا رہا ہے۔

'
Hamid Mir ky Nageenay

 

Bubber Shair

Chief Minister (5k+ posts)
ن لیگ فوری طور پر احتجاج کی جگہ تبدیل کردے یا سرے سے احتجاج کرے ہی نہ کیونکہ جمائما ایک انتہای وسیع القلب خاتون ہے پاکستان کیلئے اس کی خدمات بھی ہیں عمران سے اختلاف ہے تو اس کے گھر جاو یہ گھر تو اس کا ہے بھی نہیں اور نہ ہی اس کے بچے سیاست میں کردار ادا کررہے ہیں
 

tahirmajid

Minister (2k+ posts)
Hamid Mir intahai third class journalist hay, India or CIA kay pay roll pe hay, PMLN ka mustaqil Lifafa-khor hay. Waisey mujhey samjh nahi aati London ki police kia kar rahi hay, jo bhi Jamaima kay ghar kay samney protest karney aata hay us ko dandey maar maar kar jail mein daal de. us ka jub koi tualiq nahi to kion rishta dene jaa rahey hain baar baar. PTI ager ehtajaaj karti hay to waja bhi banti hay kionkeh Nawaz sharif criminal chor or corrupt London mein looti hui doulat se kharedey Flats mein reh raha hay or saza se bhaga hua hay
 
Sponsored Link