پشاور کا پائلٹ جہاز سمیت کُنڈ ملیر سے لاپتا،3 دن بعد لاش مل گئی

qazi-ajmal1131.jpg


تین دن سے لاپتہ انسٹرکٹر پائلٹ قاضی اجمل کی لاش بلوچستان کے علاقے کنڈ ملیر سے مل گئی۔ بلوچستان کے ضلع لسبیلہ کے ایس پی ایوب اچکزئی کے مطابق قاضی اجمل کا جیرو کوپٹر بھی کنڈ ملیر کے علاقے میں گرا پایا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بلوچستان کے علاقے آواران میں لائٹ ویٹ جہاز "جیرو کاپٹر" گر کر تباہ ہوا تھا، جس کے پائلٹ قاضی اجمل موقع پر ہی جاں بحق ہو گئے تھے۔ جب کہ بلوچستان وائلڈ لائف اہلکار امان اللہ ساجدی کے مطابق پائلٹ قاضی اجمل کا جہاز جیرو کاپٹر پہاڑ سے ٹکرا کر پولڈاٹ کے مقام پر کریش ہوا تھا۔

روزنامہ جنگ کے مطابق لائسنس یافتہ انسٹرکٹر پائلٹ قاضی اجمل کراچی سے فلائنگ کر کے بلوچستان کی حدود میں داخل ہوئے۔ طیارہ حادثے کے بعد قاضی اجمل کُنڈ ملیر میں 3 دن قبل شام کے وقت لاپتہ ہو گئے تھے، جن کی لاش اب مل گئی ہے۔

جاں بحق ہونے والے پائلٹ قاضی اجمل کا تعلق پشاور کے مشہور قاضی خاندان سے ہے۔ انہیں یاسر نامی شخص نے سیاحتی مقاصد کے لیے کنڈ ملیر بلایا تھا۔ وہ اپنے بھائی کے ساتھ جہاز کو ٹرک میں لوڈ کر کے کنڈ ملیر لے گئے تھے۔

اجمل قاضی کے چچا کا کہنا ہے کہ انہوں نے پائلٹ کو 1500 فٹ کی بلندی تک اڑایا تھا، وہاں سے اطلاع دی کہ کچھ نظر نہیں آ رہا پھر اس کے بعد ہمارا رابطہ بحال نہیں ہو سکا، ہمیں خدشہ تھا کہ جہاز یا تو پہاڑ سے ٹکرا گیا ہے یا سمندر میں گر گیا ہے۔
 
Advertisement
Sponsored Link