پٹرول مہنگا ہونے کے باعث، کھپت کم ہو گئی

5petrolkhapat.jpg

پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشربا اضافے کے بعد تیل کی کھپت میں بڑی کمی دیکھی جا رہی ہے جس سے امپورٹ بل کم ہونے کا امکان ہے۔

آئل کمپنیوں کا کہنا ہے کہ پاکستان میں تیل کی کھپت میں 20 فیصد تک کمی کا رجحان دیکھا گیا ہے۔ 16 جون کے بعد ڈیزل، پیٹرول کی یومیہ کھپت میں کمی آئی ہے جس کے بعد یومیہ کھپت 25 ہزار ٹن سے کم ہو کر کر 18 سے 19 ہزار ٹن رہ گئی ہے۔


ذرائع ابلاغ میں کہا جارہا ہے کہ اگر یہی رجحان برقرار رہا تو آئل امپورٹ کم ہوجائے گی۔ جس سے ملک کا مجموعی امپورٹ بل بھی کم ہو گا، تاہم اس سے خاطر خواہ فرق نہیں پڑےگا۔

یاد رہے کہ پاکستان کو پیٹرولیم مصنوعات کی امپورٹ پر سالانہ 17 ارب ڈالر کی ادائیگی کرنا پڑتی ہے تاہم اگر پٹرول و ڈیزل کے استعمال میں یہی رجحان رہا تو اس سے ہمارا امپورٹ بل کم ہوگا اور پاکستان کو ادائیگی کیلئے درپیش مشکلات میں بھی کمی ہوگی۔
 
Advertisement

tahirmajid

Minister (2k+ posts)
Hakomat jo tax ikatha kar rahi thi or jo target fix kiaey thay un mein se koi bhi hasil nahi ho ga, sale or bhi low level pe chali jay gi
 

Faraqlit

Senator (1k+ posts)
So if patrol import bill is 17 billions per year, means if we buy Russian oil we can save 30 percent, around $5.1 billions of dollars or +10 trillions rupees .... Shit load of money.

but our leaders, law makers, establishment have to protect there billions and Harami kids abroad, few families of elite ...

We deserve to remain slaves
 

Shareef

Minister (2k+ posts)
سرکاری اور فوجی گاڑیوں میں پیٹرول اسی طرح بہایا جا رہا ہے
 
Sponsored Link