کراچی : دعامنگی کیس، پولیس جوتے دلانے طارق روڈ لے گئی، ملزم فرار ہو گیا

dua-mangi-case-police.jpg


روزنامہ جنگ کے مطابق کراچی میں سامنے آنے والے اغوا برائے تاوان کے ہائی پروفائل دعا منگی کیس میں گرفتار ملزم زوہیب قریشی کراچی پولیس کی حراست سے فرار ہو گیا۔

اخبار کا دعویٰ ہے کہ پولیس اہلکاروں نے ملزم زوہیب قریشی کو عدالت میں پیش کیا تاہم جب پولیس اہلکار واپس جیل پہنچے تو دعامنگی کیس کا ملزم گنتی کے دوران غائب پایا گیا۔


جنگ اخبار کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ جیل وین کے ہمراہ پولیس اہلکار ملزم زوہیب قریشی کو جوتے دلانے کیلئے طارق روڈ لے کر گئے جہاں سے ملزم موقع پاتے ہی فرار ہو گیا۔

اس بات کا انکشاف تب ہوا جب ملزموں کو جیل واپس لایا گیا اور ان کی گنتی کی تو ملزم زوہیب قریشی ان میں موجود نہ تھا۔ ملزموں کو عدالت پیش کرنے والے اہلکاروں نے اس بات کو چھپایا جس سے پولیس کسٹڈی پر سوالات کھڑے ہو گئے ہیں۔کورٹ پولیس کے 2 اہلکاروں کو حراست میں لے کر فیروز آباد تھانے میں مقدمہ درج کر لیا گیا۔


یاد رہے کہ دعا منگی کو 30 نومبر 2019 کو ڈیفنس سے اغوا کیا گیا تھا اور اس کی رہائی 20 لاکھ روپے سے زائد تاوان کی ادائیگی کے بعد عمل میں آئی تھی، اس ہائی پروفائل کیس کے ملزمان کو کراچی پولیس کی خصوصی ٹیم نے 18 مارچ کو گرفتار کیا گیا تھا.

تفتیش میں یہ بات بھی سامنے آئی تھی کہ انہی ملزمان نے ڈیفنس سے تاوان کے لیے بسمہ سلیم نامی لڑکی کو بھی اغوا کیا تھا اور اس کو بھی تاوان کی ادائیگی کے بعد رہا کیا تھا، دونوں مقدمات انسداد دہشتگردی کی عدالت میں زیر سماعت ہیں۔

 
Advertisement
Last edited by a moderator:

Bubber Shair

Chief Minister (5k+ posts)
جب کوی پلسیا مشکوک قسم کی حرکت کرے تو سمجھو وہ پیسے لے چکا ہے مثلا کسی ملزم کو جوتے دلانے کیلئے دوکان پر کون بھڑوا لے کر جاتا ہے؟
زیادہ ہی رحم آرہا ہو تو اس کے پاوں کا نمبر اور برانڈ پوچھ کر منگوا دیا جاتا ہے یا کوی رشتے دار دوست دے جاتا ہے
اس کو اب چھوڑنا نہیں چاہئے انتہای بے غیرت اور خبیث مجرموں کا ٹولہ ہے جو صرف لڑکیوں کو اٹھاتا ہے کیونکہ ان میں مزاحمت کی طاقت بہت کم ہوتی ہے بے چاری ڈر جاتی ہیں اور لڑکی کی وجہ سے گھر والے اپنا اپ بیچ کر بھی رقم ادا کرتے ہیں
تصور کریں کہ کسی کی بہن ایسے اٹھای جاے اور پیسے مانگے جائیں تو اس کی کیا حالت ہوگی؟
ان سب کو پار کردیا جاے تو بہتر ہے
 

sensible

Chief Minister (5k+ posts)
سندھ نے اتنی ترقی کر لی ہے کہ اب جوتے مارتے اور کھاتے یہ لوگ مجرموں کے ابا بن کر ان کو جوتے دلانے بازاروں میں پھر رہے ہیں
 
Sponsored Link