ہمارے دانشور کیوں ذرائع کے نام سے جھوٹی خبریں چلا رہے ہیں؟ مزمل اسلم

19muzzamilaslamreactsishaqdar.jpg

تحریک انصاف کے اکانومی اینڈ فنانس کے ترجمان مزمل اسلم نے موجودہ حکومت کے بڑے بڑے دعوؤں کی قلعی کھولنے پر اسحاق ڈار کے پروگرام میں گفتگو کے کلپ شیئر کیے اور کہا کہ انہیں سمجھ نہیں آ رہا کہ ہمارے دانشور اور اخبارات ذرائع کے نام سے جھوٹی خبریں کیوں چلا رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق نجی چینل جیو کے پروگرام نیا پاکستان میں گفتگو کرتے ہوئے اسحاق ڈار نے کہا کہ آئی ایم ایف کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرنا ہو گی، ہم نے اپنا ملک چلانا ہے یا انکی ڈکٹیشن لے کر بیڑا غرق کرنا ہے۔ وه کون ہوتے ہیں ہمیں بتانے والے کہ ہمارا روپیہ اور شرح سود کدھر ہونے چاہئیں۔

اسحاق ڈار نے جیو نیوز کے پروگرام نیا پاکستان میں بات چیت کرتے ہوئے یہ بھی کہا کہ موجودہ اسمبلیوں کو اپنی مدت پوری نہیں کرنی چاہیے بلکہ اکتوبر تک نئے انتخابات کی طرف جانا چاہیے۔ ہم ڈیڑھ سال کے لیے نہیں آئے، ہمیں جلد الیکشن کی طرف جانا پڑے گا۔


انہوں نے یہ بھی کہا عالمی مالیاتی ادارے (آئی ایم ایف) سے قرض معاہدے کی مدت بڑھانے کے بجائے نئے معاہدے کی خواہش ظاہر کی اور کہا کہ پچھلی حکومت نے انتہائی سخت شرائط پر معاہدہ کیا۔ آئی ایم ایف سے نیا معاہدہ کرنا ہوگا حکومت پیٹرول اور ڈیزل کی قیمتیں بڑھا کر ایک دم عوام پر بوجھ نہیں ڈال سکتی۔

اس پر ملک کے سابق ترجمان وزارت خزانہ مزمل اسلم نے کہا ہے کہ "چلو جی ڈار صاحب نے مفتاح صاحب کے جھوٹ سامنے لے آئے، کہا کون سے دو ارب ڈالر اضافی آئی ایم ایف دے رہا ہے، اسی طرح شہباز شریف صاحب نے بھی آج شانگلہ میں بتایا سعودی عرب سے کچھ نہیں ملا۔


ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ مگر سمجھ یہ نہیں آرہا ہمارے دانشور، اخبارات نے ذرائع کر کے کیوں جھوٹی خبریں چلائیں؟ مزمل اسلم نے یہ بھی کہا کہ زرداری صاحب نے کہا وہ پانچ روپے کا ڈالر کر سکتے ہیں. ڈار صاحب جلد از جلد زرداری صاحب سے رابطہ کریں خود بہ خود پٹرول پچاس روپے کا ہو جائے گا۔

 

PakXameen

Voter (50+ posts)
Dar , sharif & zardari are trying to match the narrative of IK with these statements. They are actually tryin to fool people similar to ganja Patwaris followers and jahalas (yes not Jayalas) to make it look like they also have some ghairat (balls) to stand up to foreign dictation but these are mere statements. In reality they can sell country to any buyer they can have right now .
 
Sponsored Link