آئی ایم ایف کے کورونا ریلیف پیکج میں کرپشن کی اطلاعات ہیں، ڈاکٹر شاہدمسعود

dr-shahi1311.jpg


سینئر تجزیہ کار ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا ہے کہ آئی ایم ایف نے اس پروگرام کے ساتھ یہ شرط رکھی ہے کہ کووڈ فنڈ اور ریلیف پیکج کا آڈٹ کروایا جائے۔

نجی ٹی وی چینل جی این این کے پروگرام" لائیوود ڈاکٹر شاہد مسعود" میں گفتگو کرتے ہوئے سینئر تجزیہ کار نے کہا کہ ہمارے پاس یہ اطلاعات ہیں کہ کورونا ریلیف فنڈ میں بدعنوانی کی مصدقہ اطلاعات ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آئی ایم ایف کی جانب سے مذاکرات کے دوران یہ شرط عائد کی گئی ہے کہ پاکستان کو قرض اس وقت ملے گا جب آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی جانب سے کورونا ریلیف پیکج میں بدعنوانی کے حوالے سے آڈٹ رپورٹ سامنے لائی جائے گی اور اگراس رپورٹ میں بدعنوانی کی تصدیق ہوجائے تو اس میں ملوث افراد کے خلاف کارروائی کی جائے۔


ڈاکٹر شاہد مسعود نے کہا کہ آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی جانب سے آئی ایم ایف کے دباؤ کے بعد یہ رپورٹ جاری کردی گئی ہے جس کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے قائم کردہ کورونا ریلیف پیکج میں 40 ارب روپے کی بے قاعدگیاں دیکھی گئی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس رپورٹ آنے کے بعد اب وزیراعظم عمران خان کو ان بے قاعدگیوں میں ملوث افراد کے خلاف سخت سے سخت کارروائی کرنا ہوگی کیونکہ کورونا فنڈ ، احساس پروگرام اور اس جیسےدیگر تمام منصوبے وزیراعظم کی اپنی ذاتی دلچسپی کی بدولت قائم کیے گئے ہیں اس میں بدعنوانیوں کے مرتکب ہونے والوں کے خلاف کارروائی ہونی چاہیے۔
 
Advertisement

Curious_Mind

MPA (400+ posts)
ہمارے پاس اطلاعات ہیں؟

کون دے رہا ہے اطلاع؟
ثبوت کدھر ہیں؟
ایف آئے اے یا نیب کو کیوں نہیں دیے؟
ایویں شوشہ چھوڑ دو
 

shafiqueimran

Senator (1k+ posts)
If you have solid information and proofs take this serious matter to court instead of spreading propaganda and lies and if you have no balls to take PTI government to court regarding this corruption, give the information and proofs about the corruption to any PTI opponent like PMLN or PPP and tell them to take government to Supreme Court otherwise shut up. By the way people didn’t forget what you said about Najam Sethi and 35 punctures and how it ended and also what you did in Zainab murder case so stop making people fool.
 
Sponsored Link