انہیں مشکل یہ پیش آرہی ہے کہ عمران خان بکری بننے کو تیار نہیں،ایازامیر

samisam

Chief Minister (5k+ posts)
اگر عمران خان کو ہٹا کر کسی معین قریشی کسی شوکت عزیز یا کسی بھی زید بکر لیکن صاف ستھرے ایماندار بندے کو لاتے
یا اگر
ایماندار نا بھی ہوتا صاف ستھرا نا بھی ہوتا لیکن اس کا ماضی لوگوں کو معلوم ہوتا نا ہوتا
تو ان جرنیلوں کا چورن بکتا رہتا ُ
اور شاید قوم یہ بات ہضم بھی کر جاتی
لیکن
جب عمران خاں کی حکوُمت جو انتہائی غیر مقبول ہورہی تھی اور
یہ بھی بات ٹھیک
ہے پنجاب کا حشر نشر صرف ایک بزدار کی نا اہلی اور مس مینیجمنٹ ُ
اور مانیکے ، جٹ اور نثار
گوجر اینڈ کمپنی کی وجہ سے ہو رہا تھا اور ہوا
کوئی مانے یا نا مانے
عمران خان کی سیاست اور پی ٹی آئی کا ڈیزاسٹر اس ایک
بزدار کی وجہ سے ہوا اور اس لے پیچھے جو لوگ
تھے ان کی وجہ سے
ان ساری وارداتوں کا دفاع نا ہی یوتھ کرتی تھی نا ہی یوتھ نے کیا
اور بزدار کی وجہ سے
عمران خان کو اسی فُورم پر یوتھ نے عمران کے چاہنے والوں
نے لتاڑا بھی اقر کبھی لہٰاظ نہیں کیا
کیونکہ
اس کی وجہ سے عمران خان کی بدنامی ہورہی تھی
جبکہ عمران خان کی زاتی ایمانداری کی وجہ سے میں اور میرے
جیسے لاتعداد فالوورز جن کو مانیکوں بزداروں زیدوں بکروں
سے کوئی لینا دینا نہیں
بلکہ ان کے خلاف ہی تھے اور ہیں اور رہیں گے
لیکن جب پی ٹی آئی کی غیر مقبولیت جس کی غیر مقبولیت کی اصل وجہ بزدار پپھڑ اسکے چاچے مامے تائے مانیکے گوجر جٹ سارے ہی شامل تھے
جس کی نا اہلی نے اور
اس کے ان
چمچوں کرچھوں نے عمران خان کی بائیس سال کی محنت برباد کردی تھی
ُاور عمران خان کی حکومت اگر نا گرائی جاتی
تو صرف ایک بزدار فیکٹر نے ہی پی ٹی آئی کو الیکشن میں کبھی بھی حکومت بنانے کی پوزیشن
میں نا آنے دیتے
لیکن کبے کو لات پڑی اس کا کب سیدھا ہوگیا
جب باجوہ اینڈ کمپنی نے چوروں ڈاکوؤں لٹیروں منی لانڈروں منشیات فروشوں قاتلوں کو لاکر سر پر بٹھا دیا تو
یہ عمران خان
کی فیور میں چلا گیا
اور لوگوں اور عام آدمی کے دل میں ان چوروں ڈاکوؤں کی وجہ سے باجوے اور امریکہ کے چار
پانچ پالتو کتے
جرنیلوں سے نفرت کا آغاز ہوگیا
اگر ان چوروں ڈاکوؤں منی لانڈروں منشیات فروشوں ُاور قاتلوں کو نا لاتے تو
جو حالت
میڈیا نے اور بزادار کی نا اہلی نے پی ٹی آئی کی کی ہوئی تھی لوگ آسانی سے اس سازش یا مداخلت کو بھی ہضم
کر جاتے لیکن اصل حرام زدگی ملک دشمنی اور گشتی پن یہُ ہی ہوا
کہ جن کی ساری سیاست لوٹ مار کرتے گزری منی لانڈرنگ کرتے گزری مشیات فروش اور قاتل
تھے جو فوج پر کتوں کی طرح بھونکتے تھے جو فوج کو خلائی مخلوق
بھونکتے تھے جن حرام زادوں گشتی کے بچوں کے جلسے میں نعرے لگتے تھے یہ جو دہشت گردی ہے اس کے پیچھے وردی ہے جو ساری سیاست
میں فوج دشمنی کرتے رہے فوج کے خلاف نفرت پھیلاتے رہے فوج کو اس ملک کی بربادی کا زمہ دار ٹھہراتے رہے
جب باجوے نے ان ہی حرام زادوں چوروں ڈاکوؤں کو سر پر بٹھا دیا۔
تو وہ محب وطن ہوگئے ُ
اور وہ لوگ جو ساری عمر فوج پر بھونکنے والے کتوں کو مونہہ توڑ جواب دیتے رہے جو پاکستان کی
فوج کے رضاکارانہ ڈیفنڈرز بن کر ہر محاز پر پاکستان کی فوج پر
بھونکنے والے کتوں کو شٹ اپ کال دیتے رہے
پاکستاُن کی افواج کی خاطر بلاُمعاوضہ
بغیر کسی لالچ اور غرض
کے فوج کا دفاع
کرتے رہے ان میں
زیادہ تر اوور سیز پاکستانی ڈاکٹرز انجینئرز
ایگیزیکٹیو اور عام محنت کش پاکستانی بھی تھے وہ سب
ففتھ جنریشن وار کے
سپاہی بن کر فوج کے خلاف پروپیگنڈہ کرنے والوں کا مونہہ توڑتے رہے فوج کے خلاف بھونکنے والے کتوں
کو انکی زبان میں ہی جواب دیتے رہے باجوے اینڈ کمپنی نے ان سب کو غدار اور ملک دشمن قرار دے
کر ان سے ووٹ کا حق چھین کر پاکستان کے جرنیلو ں کے
خلاف جو نفرت تھی اس کو عام فوج تک پھیلانے کا آغاز
کردیا
اب اس کے باوجود بزدار ی مانیکی گوجر گٹھ جوڑ کے کولیٹرل ڈیمج کے باوجود بزدار کی نا کے باوجود کہ
عمران خان اور اسکی ٹیم میں موجود بہت سے ایماندار اور اہل بندوں نے جیسے
مشکل حالات میں
کووڈ میں
عالمی مہنگائی میں ورلڈ وائڈ ری سیشن کے باوجود جتنے اچھے طریقے سے معیشت کو سنبھالا ہوا تھا
اور بہت اچھی طرح سنبھالا ہوا تھا لیکن اسکی ساری محنت پر باجوے
اور اسکے چند پالتو جرنیلوں
نے ان
چور ڈاکو لٹیروں منی لانڈروں
سزا یافتہ مجرموں لاکر انکی مجرمانہ پشت پناہی کرکے عمران
خان کی محنت پر پانی پھیر
دیا اور ایک
تو حرام زدگی
کی ملک دشمنی کی فوج دشمنی کی اسلام
دشمنی کی اور پھر
بھی اس پر ڈٹا رہا اپنی غلطی پر ڈٹا رہا خود بھئ

زلیل ہوتا رہا اور فوج کو بھی زلیل کراتا رہا
اگر عمران خان کی حکومت گرانی کسی ملک مفاد میں تھی
میں اگر عمران خان کی حکومت گرا کر کوئی عبوری حکومت لے آتے
کوئی شوکت عزیز کوئی معین قریشی
ہی لے آتے
تو لوگ کبھی بھی ایسا ری ایکٹ نا کرتے
اس ری ایکٹ اور باجوے اور ان چند جرنیلوں کے خلاف
عوامی ری ایکشن کی وجہ نوے فیصد وجہ یہ نہیں تھی کہ عمران خان کو ہٹایا
اصل وجہ ہے عمران خان کو ہٹا کر۔
چوروں ڈاکوؤں
منی لانڈروں منشیات فروشوں ماڈل ٹاؤن کے قاتلوں سزا یافتہ مجرموں اور جن پر فرد جرم لگنی تھی ان کو لاکر بٹھا دیا گیا
اور محسن داوڑوں
علی وزیروں اچکوں ملک دشمنوں فوج دشمنوں کو لاکر بٹھا دیا گیا
جن چوروں ڈاکوؤں فراڈیو ں کی ثابت شدہ چوری کے ثبوت تھے
اور ہیں
جو سزا یافتہ تھے جو کتوں کی طرح ہماری پاک فوج پر بھونکتے تھے جن کے بارے
میں خود آرمی کی بریفنگ میں سب کو بتایا جاتا رہا کہ
یہ چور ہیں لٹیرے ہیں
انکے انڈیا ُاور ویسٹرن انٹرسٹ ہیں انکے انٹرسٹ پاکستان کی
سالمیت کے خلاف ہیں یہ پیسے کی خاطر اپنی زاتی کرپشن کو بچانے کی خاطر
ملک کی سلامتی داؤ
پر لگا سکتے ہیں
یہ باجوہ اینڈ کمپنی کی بریفنگ ہوتی تھی
لیکن
جب عمران جیسے ایماندار بندے کو ہٹا کر ان ہئ چور ڈاکوؤں لٹیروں سزا یافتہ مجرموں قاتلوں منشیات فروشوں
کو لاکر بٹھا دیا گیا تو یہ اس قوم کے لئے ایک شاک ایک ٹرننگ
پوائنٹ تھا اور لوگ پڑھے لکھے ہیں بھیڑ بکریاں نہیں کہ چار پانچ
جرنیل اگر سیاہ کو سفید کہنا شروع کردیں گے تو
عوام مان لے گئ
اب ایسا نہیں ان چوروں
ڈاکوؤں لٹیروں منی لانڈروں کے سہولت کار بن
کر انکو کلین چٹ دلانے
والے لوگ غدار ملک دشمٗن اور نطفہ حرام
ہی شمار ہونگے
چاہے جرنیل ہوں جج ہوں صحافی ہوں یا عام آدمی اس حرام زدگی کی وجہ سے اس وقت فوج سے تو نہیں مگر جرنیلوں سے لوگوں کو نفرت شروع ہوگئی
ہے
چار پانچ جرنیلوں کی حرام زدگی نطفہ حرامی ُاور زلالت کی وجہ سے سارے
جرنیلوں کی ماں بہن ایک
ہورہی ہے
لوگ اب اعجاز امجد کی
نواز شریف اینڈ کمپنی سے مل کر پرانی لوٹ مار کے اسکینڈل مٹھو کباڑئے کے سکینڈل علیم خان کے سکینڈل انکا
اور لینڈ گریبر کا نیکسس سارا کچھ نکا ل لائے ہیں
قادیانی فیکٹر بھی نکال لائے ہیں
یہ سارا کچھ کیوں ہوا
کیوں کہ کہ ستر سال کئ ہسٹری میں پہلی بار لوگوں نے محسوس کیا
کہ انہیں بے وقوف بنایا جارہا یہ جرنیل جن چور وں ڈاکوؤں لٹیروں کو ستر سال چور ڈاکو کہتے رہے
ملک دشمن کہتے رہے
وہی اب ایماندار ہوگئے
محب وطن ہوگئے جو اصل میں ایماندار تھے وہ چور
ڈاکو اور ملک دشمن ہوگئے
باجوہ اینڈ کمپنی تمہارا یہ چورن اب بکنے والا نہیں اسی لئے یہ چورن قوم نے خریدنے سے انکار کردیا
ان چوروں ڈاکوؤں منی لانڈروں منشیات فروشوں قاتلوں
کو قوم پر بٹھانے کی حرام زدگی نطفہ حرامی اور غلطی کو مان لیتے
غلطی سدھار لیتے چوروں ڈاکوؤں کی جگہ عبوری حکومت مگر کرپشن کے خلاف کسی حکومت کو بٹھا دیتے
پھر بھی یہ چورن بک جاتا محب وطنی کی جرنیلی پھکیُ لوگ کھاتے رہتے
لیکن ایک غلطی کرنا اور پھر غلطی پر اڑے رہنا اور شٹ کو حلوہ ثابت کرکے قوم کو کھانے کا کہنا۔
اب نہیں چلے گا
پھر اسی قوم نے جرنیلوں کی حرام زدگی نطفہ حرامی پچیس مئی کو وار کرائم کی صورت میں دیکھا وہ
ایک بھی ایک بہت بڑا ٹرننگ پوائنٹ تھا پہلے تو نفرت صرف چار پانچ جرنیلوں کے خلاف تھی
لیکن اس دن عورتوں مردوں نہتی عوام اور بچوں پر پچاس ہزار زہریلی گیس کی شیلنگ وارکرائم نے اس نفرت میں جرنیلوں کے خلاف تو اضافہ کیا مگر وہ نفرت عوام اور فوج کے درمیان ہونے کا آغاز
ہوگیا
اب بہت سے لوگ عمران خان اور پی ٹی آئی کے ساتھ صرف اس لئے ہیں کہ وہ چند نطفہ حرام جرنیلوں کی حرام زدگی چوروں ڈاکوؤں لٹیروں منی لانڈروں منشیات فروشوں قاتلوں کی جرنیلی سر پرستی کو ہضم نہیں کرسکے نا ہی ہضم ہوسکتی ہے اور اب
باشعور عوام نے جرنیلوں کی محب وطنی کا چورن خریدنے سے انکار کردیا ہے
عمران خان کے فالوورز
کی اکثریت عمران خان
کی زاتی ایمانداری کی وجہ سے اسکے ساتھ ہے اور اسکے نئے فالوورز جن
میں دن بدن اضافہ ہورہا ہے
وہ آج چوروں ڈاکوں منی لانڈروں سزا یافتہ مجرموں منشیات فروشوں قاتلوں
کی دشمنی اور مخالفت میں پی ٹی آئی کا ساتھ دے رہے ہیں
اور جرنیلی چورن سے نفرت کر رہے ہیں صرف ان چوروں ڈاکوؤں کی سرپرستی کی وجہ سے

ابھی بھی وقت ہے اپنی
غلطی سدھار لو ان چوروں ڈاکوؤں منی لانڈروں منشیات فروشوں قاتلوں ُاور انکے بینیفشری مٹھو کباڑئے علیم خان اور اعجاز امجد کی لوٹ مار بچانے کے لئے باجوے کے کچھ رشتے داروں کی لوٹ مار بچانے کے لئے پوری پاکستان آرمی کی عزت داؤ پر نا لگاؤ
فوج کی عزت اور محبت عوام کے دل میں رہنے دو۔
چور کو چور کہو ڈاکو کو ڈاکو برے کو برا اچھے کو اچھا اپنی
غلطی سدھار لو اب
ففتھ جنریشن وار کا دور ہے مینُ سٹریٹ میڈیا کو خرید کر بھی کوئی فائدہ نہیں بکاؤ صحافی
جو کتوں کی طرح فوج پر نواز شریف سے پیسے لے کر بھونکتے تھے وہ
اب جرنیلوں کے حق میں بھونکنے کی ڈیوٹی دے رہے ہیں
لیکن اب سوشل میڈیا کا دور ہے اب یہ چورن نہیں بکے گا
چوروں ڈاکوؤں کی سرپرستی تمہیں لے ڈوبی ہے مزید
ڈوب رہے ہو
ہوش کے ناخن لو اور اپنی غلطی سدھار لو
 

sensible

Chief Minister (5k+ posts)
ہر بار عمران خان رسیدیں دیتے ہیں ہر بار عمران خان ریکارڈز دیتے ہیں اپنے ہاتھوں سے ہر بار نواز شریف ایک بار بھی منی ٹریل نہیں دیتے اور اب بھی نواز شریف کی منی ٹریل ڈیو ہے جب تک وہ نہیں آتی نواز شریف عوام کی نظر میں قابل قبول نہیں ہے
 
Sponsored Link