بینکوں کے جعلی نمائندے بن کر تفصیلات پوچھنے والوں کا ڈی جی ایف آئی اےکو فون

FIA.jpg


سادہ لوح عوام کو بینکوں کے نمائندے بن کر اکاؤنٹس کی تفصیلات پوچھنے والے جعل سازوں نے ڈی جی ایف آئی اے کو بھی نہ بخشا اور انہیں فون کرکے معلومات لینے کی کوشش کرتے رہے۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس چیئرمین محسن عزیز کی سربراہی میں ہوا جس میں وفاقی تحقیقاتی ادارے کے حکام نے انکشاف کیا کہ ڈی جی ایف آئی اے کو بھی جعلسازوں کی جانب سے فون کال موصول ہوئی جس میں انہوں نے بینک اکاؤنٹس کی تفصیلات پوچھنے کی کوشش کی۔

جس پر کمیٹی چیئرمین نے کہا کہ اس معاملے کی تحقیقات ہونی چاہیے اور ذمہ داروں کی شناخت کرکے ان کو سزا دی جائے اور ان کے نام پبلک کیے جائیں ۔

اجلاس کے دوران سینیٹر اعظم نظیر تارڑ نے کہا کہ ملک میں صحافیوں کو ہراساں کیے جانے کی شکایات موصول ہورہی ہیں، صحافی ہمیں ملکی حالات و معاملات سے آگاہی دیتے ہیں، مگر یہاں صحافیوں کو نوٹس دے کر طلب کرلیا جاتا ہے ایف آئی اے صحافیوں کیلئے نرم گوشہ اپنائے ۔

جس پر جواب دیتے ہوئے ڈی جی ایف آئی اے نے کہا کہ قانون سب کیلئے برابر ہے، ایف آئی اے کا ادارہ شکایات پر تحقیقات کرتا ہے۔
 
Advertisement

The Sane

Chief Minister (5k+ posts)
جس ملک میں ایک ٹھگ تین دفعہ وزیرِ اعظم بن جائے اس ملک کی قوم کو ویسا ہی ٹھگ ہونا چائیے
 

Cape Kahloon

Minister (2k+ posts)
DG FIA ager ko phone kernay walon ko FIA nay ne pakra pher tu Allha he Hafiz ha.
Ess bat sey andaza laga lo FIA kitni active ha?
 
Sponsored Link