جانتے ہیں کہ کس نے بغض حفیظ اور بغض عمران میں ووٹ دیا - بلاول بھٹو

Siasi Jasoos

Chief Minister (5k+ posts)

اسلام آباد: چیئرمین پیپلز پارٹی نے اعتماد کے ووٹ کا شوشہ سینیٹ میں شکست چھپانے کی کوشش قرار دیتے ہوئے کہا ہے ہم بتائیں گے کہ عدم اعتماد کب اور کہاں ہوگا؟

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کے اپنے ارکان اور اتحادیوں نے بھی اب چھوڑ دیا۔ اب مزید ڈرامے بازی نہیں چلے گی۔ کسی کو این آر او ملے گا، نہ بھاگنے دیں گے۔ وزیراعظم کو پیسے لینے اور دینے والوں کا علم ہے تو نام سامنے لائیں۔

تفصیل کے مطابق بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کیخلاف کون سی حکمت عملی اپنائی جائے گی، اس کا فیصلہ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے کیا جائے گا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نے کہا تھا کہ اپوزیشن اسلام آباد کی سیٹ جیت گئی تو نئےانتخابات کرا دیں گے، ہم نے ان کا چیلنج قبول کر لیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین سینیٹ کے الیکشن سمیت ہر فورم پر مقابلہ کریں گے

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ ہم نے دنیا کو سینیٹ الیکشن میں بتا دیا کہ حکمران مسترد ہو چکے ہیں۔ سینیٹ الیکشن کے بعد اخلاقی طور پر ہی اپنا استعفیٰ جمع کرا دیتے۔ کل کہا تھا اعتماد کا ووٹ لوں گا، اب اس سے بھی بھاگ رہے ہیں۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ پی ڈی ایم میں اتفاق رائے سے جو بھی فیصلہ ہوگا، اس پر عمل کریں گے۔ ہم انھیں چین سے نہیں بیٹھنے دیں گے۔ ہم این آر او نہیں دیں گے، کہیں نہیں بھاگ سکیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم اسمبلی تحلیل کرنے سے ڈرتے ہیں۔ ہم جانتے ہیں کہ کون کون لوگ اگلا الیکشن تیر اور شیر کے نشان سے لڑنا چاہتے ہیں۔ جن کو سیاست کا پتا ہے، ان کو ہماری سیاست کا اندازہ ہے۔ چیلنج کرتا ہوں، ہمت ہے تو ان ارکان کو جماعت سے نکالو۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومتی ارکان نے مثبت رسپانس دیا، جانتے ہیں کن حکومتی ارکان کی ہمدردیاں ہمارے ساتھ ہیں، ہمارے ساتھ کتنے لوگ ہیں ابھی کارڈ شو نہیں کریں گے۔

 
Advertisement

ish sasha

Voter (50+ posts)

اسلام آباد: چیئرمین پیپلز پارٹی نے اعتماد کے ووٹ کا شوشہ سینیٹ میں شکست چھپانے کی کوشش قرار دیتے ہوئے کہا ہے ہم بتائیں گے کہ عدم اعتماد کب اور کہاں ہوگا؟

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم کے اپنے ارکان اور اتحادیوں نے بھی اب چھوڑ دیا۔ اب مزید ڈرامے بازی نہیں چلے گی۔ کسی کو این آر او ملے گا، نہ بھاگنے دیں گے۔ وزیراعظم کو پیسے لینے اور دینے والوں کا علم ہے تو نام سامنے لائیں۔

تفصیل کے مطابق بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کیخلاف کون سی حکمت عملی اپنائی جائے گی، اس کا فیصلہ پی ڈی ایم کے پلیٹ فارم سے کیا جائے گا۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عمران خان نے کہا تھا کہ اپوزیشن اسلام آباد کی سیٹ جیت گئی تو نئےانتخابات کرا دیں گے، ہم نے ان کا چیلنج قبول کر لیا تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین سینیٹ کے الیکشن سمیت ہر فورم پر مقابلہ کریں گے

چیئرمین پیپلز پارٹی نے کہا کہ ہم نے دنیا کو سینیٹ الیکشن میں بتا دیا کہ حکمران مسترد ہو چکے ہیں۔ سینیٹ الیکشن کے بعد اخلاقی طور پر ہی اپنا استعفیٰ جمع کرا دیتے۔ کل کہا تھا اعتماد کا ووٹ لوں گا، اب اس سے بھی بھاگ رہے ہیں۔ بلاول بھٹو نے کہا کہ پی ڈی ایم میں اتفاق رائے سے جو بھی فیصلہ ہوگا، اس پر عمل کریں گے۔ ہم انھیں چین سے نہیں بیٹھنے دیں گے۔ ہم این آر او نہیں دیں گے، کہیں نہیں بھاگ سکیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم اسمبلی تحلیل کرنے سے ڈرتے ہیں۔ ہم جانتے ہیں کہ کون کون لوگ اگلا الیکشن تیر اور شیر کے نشان سے لڑنا چاہتے ہیں۔ جن کو سیاست کا پتا ہے، ان کو ہماری سیاست کا اندازہ ہے۔ چیلنج کرتا ہوں، ہمت ہے تو ان ارکان کو جماعت سے نکالو۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومتی ارکان نے مثبت رسپانس دیا، جانتے ہیں کن حکومتی ارکان کی ہمدردیاں ہمارے ساتھ ہیں، ہمارے ساتھ کتنے لوگ ہیں ابھی کارڈ شو نہیں ک
HARAMII GANDOOOOOOOOOOOOOOOOOOOOOOOOO
 

Malik_007

MPA (400+ posts)
Abay ja zabardasti k bhutto !!! Sindh main tm sirf is liyeh iqtidar main ho k tm wahan k logon ka istehsal karty ho, unko tm nay jahil or ghulam rakha hua ha, per INSHAH ALLAH unko bhi aakhir shahoor i ga jab wo doosray provinces ko dekhain gy! Tmhari okat bs itni c ha k tm zabardasti ka bhutto apnay naam k sath na lagao to tm so called leader he nahi kehla saktay! or Nani agar shareef apnay nam k sath na lagai to usko bhi koi leader nahi samjhay ga! ajeeb chay kisam k log hain yeh!
 

Malik_007

MPA (400+ posts)
ہیجڑوں کے لیڈر بلاول کی پریس کانفرنس دیکھی، سب سے مزاحیہ بات یہ تھی کہ بے بی کہتا ہے کہ عمران خان میں فیصلے کرنے کی صلاحیت نہیں ہے، وہ فیصلے کرنا نہیں جانتا، اس لیے اب ہم فیصلہ کریں گے
فلمی ڈائیلاگ کی حد تک تو ایسے بیانات بڑے مسحور کن ہیں لیکن ذرا ایک جائزہ لیتے ہیں کہ عمران خان کا قد کتنا بڑا ہے اور یہ پرچی لیڈر اور موروثی چئیرمین کتنا بونا ہے
عمران خان نے جب اکیس سال کا کرکٹ کیریر اپنے نقطہِ عروج پر ختم کیا اور وہ میلبورن کرکٹ گراؤنڈ میں ورلڈ کپ لہرا رہا تھا تو اس وقت بے بی بلاول کی عمر محض چار سال تھی اور یہ پیمپر میں پیشی کیا کرتا تھا
جب عمران خان نے ایشیاء کے سب سے بڑے اور دنیا کے پہلے خیراتی کینسر ہسپتال کی بنیاد رکھی اور اس کی کیمپئننگ کا آغاز کیا اس وقت جانتے ہیں بلاول کہاں تھا ؟ وہ اپنی ماں کے پیٹ میں تھا
پھر جب عمران خان نے سیاسی جماعت کی بنیاد رکھی اور اپنا پہلا الیکشن لڑا اس وقت بلاول ابھی دس سال کا بھی نہیں ہوا تھا
اور جب عمران خان پاکستان کا وزیراعظم بنا تو اس وقت پرچی لیڈر بلاول کی سیاسی عمر ، عمران خان کے ایک ہاتھ کی انگلیوں جتنی تھی
یہ ایک طویل، مشکل ترین، صبر آزما اور مسلسل جدوجہد پر مبنی ایک زندگی تھی جو عمران خان نے بسر کی۔
وہ ایک ہی وقت میں دنیا کا بہترین کرکٹر، فلاحِ انسانیت ایڈمنسٹریٹر اور سیاستدان دان رہ چکا ہے۔ اور وہ ہر روپ میں کامیاب رہا، نمبر ون بنا۔ ایسے جینیس لوگ دنیا کے لیے انسپائریشن کی کہانیوں کے مرکزی کردار ہوتے ہیں
یوں ایک عمران خان نے تین انسانوں جیسی تین مختلف شعبوں میں ایک بھرپور اور کامیاب ترین زندگی گزاری ہے اور آج وہ اپنی نقطہِ عروج پر پورے قد کے ساتھ کھڑا ہے اور وہ اب پاکستان کو اس بدبودار مافیاز سے آزاد کروانے جا رہا ہے۔ اس کے عزم کے سامنے تمہاری کوئی حیثیت نہیں ہے۔
اور بلاول بیٹا تم ایک نالی کے کیڑے ہو، ایک کریمنل باپ کی اولاد ہو جس نے جرائم اور کرپشن سے پیسہ اکھٹا کیا اور اب اس پیسے سے لوگوں کے ضمیر خرید کر پاکستان جیسے جاہل معاشرے میں سیاستدان کہلاتے ہو۔ تم عمران خان کے قد کے سامنے ایک محض ایک کیڑے ہو، گٹر کے کیڑے
اور سن ۔۔۔ باپ کو مت سکھا کہ کیا کرنا ہے۔۔۔۔۔!!

تحریر: عاشور ویوز
 

Jawad66

MPA (400+ posts)
Mard tou tu pehlee he nahin tha Hijrey, abb aagey aao aur hataoo Imran Khan. Yeh time buying tactics aur zameer frosh hareedney ke liyae hain. Khan ko inn sab bc ko pakar kar lambaa daalna chahiyae abb.
O Khusrey tera Khan tiger Bilawal ke reham o karm per he,Bilawal bhaga nahi,shair ke tara dhaar reha he.
 

Keep the trust

MPA (400+ posts)
ہیجڑوں کے لیڈر بلاول کی پریس کانفرنس دیکھی، سب سے مزاحیہ بات یہ تھی کہ بے بی کہتا ہے کہ عمران خان میں فیصلے کرنے کی صلاحیت نہیں ہے، وہ فیصلے کرنا نہیں جانتا، اس لیے اب ہم فیصلہ کریں گے
فلمی ڈائیلاگ کی حد تک تو ایسے بیانات بڑے مسحور کن ہیں لیکن ذرا ایک جائزہ لیتے ہیں کہ عمران خان کا قد کتنا بڑا ہے اور یہ پرچی لیڈر اور موروثی چئیرمین کتنا بونا ہے
عمران خان نے جب اکیس سال کا کرکٹ کیریر اپنے نقطہِ عروج پر ختم کیا اور وہ میلبورن کرکٹ گراؤنڈ میں ورلڈ کپ لہرا رہا تھا تو اس وقت بے بی بلاول کی عمر محض چار سال تھی اور یہ پیمپر میں پیشی کیا کرتا تھا
جب عمران خان نے ایشیاء کے سب سے بڑے اور دنیا کے پہلے خیراتی کینسر ہسپتال کی بنیاد رکھی اور اس کی کیمپئننگ کا آغاز کیا اس وقت جانتے ہیں بلاول کہاں تھا ؟ وہ اپنی ماں کے پیٹ میں تھا
پھر جب عمران خان نے سیاسی جماعت کی بنیاد رکھی اور اپنا پہلا الیکشن لڑا اس وقت بلاول ابھی دس سال کا بھی نہیں ہوا تھا
اور جب عمران خان پاکستان کا وزیراعظم بنا تو اس وقت پرچی لیڈر بلاول کی سیاسی عمر ، عمران خان کے ایک ہاتھ کی انگلیوں جتنی تھی
یہ ایک طویل، مشکل ترین، صبر آزما اور مسلسل جدوجہد پر مبنی ایک زندگی تھی جو عمران خان نے بسر کی۔
وہ ایک ہی وقت میں دنیا کا بہترین کرکٹر، فلاحِ انسانیت ایڈمنسٹریٹر اور سیاستدان دان رہ چکا ہے۔ اور وہ ہر روپ میں کامیاب رہا، نمبر ون بنا۔ ایسے جینیس لوگ دنیا کے لیے انسپائریشن کی کہانیوں کے مرکزی کردار ہوتے ہیں
یوں ایک عمران خان نے تین انسانوں جیسی تین مختلف شعبوں میں ایک بھرپور اور کامیاب ترین زندگی گزاری ہے اور آج وہ اپنی نقطہِ عروج پر پورے قد کے ساتھ کھڑا ہے اور وہ اب پاکستان کو اس بدبودار مافیاز سے آزاد کروانے جا رہا ہے۔ اس کے عزم کے سامنے تمہاری کوئی حیثیت نہیں ہے۔
اور بلاول بیٹا تم ایک نالی کے کیڑے ہو، ایک کریمنل باپ کی اولاد ہو جس نے جرائم اور کرپشن سے پیسہ اکھٹا کیا اور اب اس پیسے سے لوگوں کے ضمیر خرید کر پاکستان جیسے جاہل معاشرے میں سیاستدان کہلاتے ہو۔ تم عمران خان کے قد کے سامنے ایک محض ایک کیڑے ہو، گٹر کے کیڑے
اور سن ۔۔۔ باپ کو مت سکھا کہ کیا کرنا ہے۔۔۔۔۔!!

تحریر: عاشور ویوز
Bilawal ki syasi umer choti hi rehti agar khan sahab ussay itni ahmiyat na daitay. IK made jali Bhutto a leader.
 

Jawad66

MPA (400+ posts)
Young guns Tiger Bilawal and Marrium BB outsmarted Khan,he should accept his defeat and leave Pakistan,otherwise he has to stay behind bars all his life.
 
Sponsored Link

Featured Discussion Latest Blogs اردوخبریں