خاتون پر تشدد کرنے والے سکیورٹی گارڈ کو گرفتار کر لیا گیا

9%DA%AF%D8%A6%D8%A7%D8%B1%D8%AF%D8%AA%DB%81%D8%B1%D8%AA%D8%A6%D8%B1%D8%B9%D9%88%DB%81%D9%85%D9%88%D9%86.jpg

ایک خاتون پر سفاکانہ تشدد کرنے والے سکیورٹی گارڈ کو سی سی ٹی وی فوٹیج نشر ہونے کے بعد گرفتار کر لیا گیا۔ سکیورٹی گارڈ کے خلاف متاثرہ خاتون نے درخواست دی تھی جس پر مقدمہ درج کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقے گلستان جوہر 17 بلاک میں خاتون پر سکیورٹی گارڈ نے تشدد کیا تھا اور فرار ہو گیا تھا، متاثرہ خاتون کا بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وہ پانچ ماہ کی حاملہ ہے، بیٹا مجھے کھانا دینے آیا تو سکیورٹی گارڈ نے گالم گلوچ کی اور تشدد کیا جبکہ سکیورٹی گارڈ کا کہنا ہے کہ خاتون نے بدتمیزی کی اور گالیاں نکالیں جس پر مشتعل ہو گیا اور مجبور ہو کر یہ قدم اٹھایا۔


سکیورٹی گارڈ کا کہنا ہے کہ خاتون اپنے شوہر کے ساتھ آئی تھی اور میں پوچھ گچھ کر رہا تھا، اس کے گالم گلوچ کرنے پر مشتعل ہو گیا۔ سکیورٹی گارڈ کے تشدد سے خاتون بے ہوش گئی تھی۔ پولیس کے مطابق خاتون گلستان جوہر میں مختلف فلیٹوں میں کام کرتی ہے، ہم نے دفعہ 154 کا بیان لے لیا ہے اور سکیورٹی گارڈ کی شناخت عادل کے نام سے ہوئی ہے۔


سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا جا سکتا ہے سیکیورٹی گارڈ اور خاتون کے درمیان تلخ کلامی کے دوران سیکیورٹی گارڈ نے سفاکیت کا مظاہرہ کرتے ہوئے خاتون کو زوردار تھپر رسید کیا جس کے باعث وہ زمین پر گری اور اس نے زمین پر گری خاتون کو بھاری بھر کم جوتا منہ پر دے مارا اور خاتون بے ہوش ہوگئی ،خاتون بے ہوشی کی حالت میں کافی دیر وہاں پڑی رہی۔
 
Sponsored Link