دعا زہرا کا نکاح نامہ جعلی ثابت، نکاح خواں اور گواہ کراچی پولیس کے حوالے

5suazehranikafake.jpg

کراچی سے بھاگ کر پنجاب میں پسند کی شادی کرنے والی نو عمر لڑکی دعا زہرا کا نکاح پڑھوانے والے مولوی اور شادی کے گواہ کو کراچی پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

دونوں افراد کو راہداری ریمانڈ لے کر کراچی پولیس کے حوالے کیا گیا ہے،پنجاب پولیس کا کہنا ہے کہ نکاح خواں اور گواہ پر دعا زہرا کا بوگس نکاح پڑھانے کا الزام ہے، جس پر ملزمان کو جوڈیشل مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا تھا۔


پولیس کا کہنا ہے کہ دعا زہرا کی عمر سے متعلق تضاد پایا جاتا ہے، اس سلسلے میں مزید تفتیش کراچی پولیس کرے گی،دوسری جانب سندھ ہائی کورٹ میں دعا زہرا کی عدم بازیابی کے خلاف کیس کی سماعت ہوئی، دعا زہرا کو عدالت میں پیش نہ کرنے پر عدالت نے سخت اظہار برہمی کیا، عدالت نے دعا زہرا کو آئندہ منگل کو پیش کرنے کا حکم دیدیا کہا پیش نہ ہونے پر توہین عدالت کی کارروائی ہوگی۔

دعا زہرا نے سندھ اور پنجاب پولیس پر ہراساں کرنے کا الزام لگایا ہے، دعا زہرا نے اپنی زندگی کے حوالے سے خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ان کی زندگی کو خطرات لاحق ہیں،انہوں نے کہا کہ سندھ پولیس اغوا کر کے کراچی لے جانا چاہتی ہے،میں نے اپنی پسند سے ظہیر احمد سے شادی کی ہے، اگر ہمیں کچھ ہوا تو والدین، پنجاب اور سندھ پولیس ذمہ دار ہوگی۔
 
Advertisement
Sponsored Link