سویاں کھانا جرم بن گیا،سوتیلی ماں اور سگے باپ کا بچی پر تشدد

sawaiaan%20pr.jpg


والدین تو شفقت اور محبت سے رکھتے ہیں لیکن فیصل آباد کے والدین نے کچھ الگ ہی کردیا، سویاں کھانے پر 13 سالہ بیٹی پر بہیمانہ تشدد کیا، بچی شدید زخمی ہے، آنکھ بھی نہیں کھل پارہی۔

واقعہ فیصل آباد کے علاقے اکبر ٹاؤن میں پیش آیا، جہاں سویاں کھانے پر سوتیلی ماں اور سگے باپ نے 13 سالہ بیٹی زینب کیلئے سویاں کھانا جرم بنادیا، بیٹی کو تشدد کا نشانہ بنایا، پولیس نے والدین کو گرفتار کرکے مقدمہ درج کرلیا۔

متاثرہ بچی زینب نے بتایا کہ اسے پائپ اور تاروں سے مارا گیا،اتنا ہی نہیں والدین معمولی معمولی بات پر تشدد کرتے تھے،بچی زینب کو چائلڈ پروٹیکشن بیورو نے تحویل میں لے لیا اور چائلڈ پروٹیکشن افسر روبینہ اقبال کی مدعیت میں واقعے کا مقدمہ درج کیا گیا۔


پولیس کا کہنا ہے کہ باپ ساحل اور سوتیلی ماں اسما کے خلاف مقدمے میں چار دفعات شامل کی گئیں،پولیس اور چائلڈ پروٹیکشن ٹیم گھر پہنچی تو زینب نیم بیہوش کی حالت میں ملی،والدین نے قتل کی نیت سے آہنی راڈ اور گیس پائپ سے زینب کو مارا تھا،پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان لوہے کا راڈ گرم کرکے بچی کا جسم داغ دار کرتے تھے، ملزمان کو علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کیا جائے گا۔
 
Advertisement
Last edited by a moderator:

sangeen

Minister (2k+ posts)
Bachi Child Protection maen le kar parents ko ayashi karne mat chor dena ab... They need sever punishment who hurt this little soul.
 
Sponsored Link