عزیزالرحمان کا دفاع کرنے والا مفتی اسماعیل گرفتار،دیکھیے گرفتاری کی ویڈیو

Young_Blood

Minister (2k+ posts)
Zamana e Aakhrat se pehle Masjido aur madrasoo k Khateeb,Imam,Mowazan,Students kon ho gay un k waldaien kon ho gay, wo kaha se aaey hein , uss area k logo ko kuj ata pata nahi ho ga.. aur ye baat such sabit hoti hai, madraso mein k students kon hein kaha se aatey hein koi ataa pata nahi, masjido k khateeb, imam, mowazan kon hein koi ataa pata nahi..
ab Mufti aziz ko dekh lein wo mianwali ka hai aur khateeb lahore mein laga howa hai, kya lahori khateeb molvi mufti kam pur gay they jo iss ko lahore mein rakha gaya tha?
area ka khateeb ho ga imam ko ga students ho gay mowazan ho ga to her koi ussey janta ho ga, uss k khandan ko janta ho ga.. k wo kis character ka insan hai.
Govt ko sab se pehle iss per kaam karna chahiay, jaha ke masjid jaha ka madrassa ussi area ka khateeb, imam, mowazzan, students, simple
 

Aristo

MPA (400+ posts)
girftari inhain clean chit denay k liye nahi honi chahiya in loagon ko saza milni chahiye warna jo inhain chorain gay who b Qayamat k roz is main barabar k shareek e juram hon gay
 

Sar phra Dewanah

Politcal Worker (100+ posts)
ایبٹ آباد (اُردو پوائنٹ تازہ ترین اخبار۔ 21 جون 2021ء) : ایبٹ آباد میں معصوم بچے کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے والے امام مسجد کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ مقامی میڈیا کے مطابق ایس ایچ او تھانہ ڈونگا گلی نے کارروائی کرتے ہوئے بچے کو جنسی زیادتی کا نشانہ بناتے ہوئے امام مسجد کو گرفتار کر کے اس کے خلاف تفتیش کا آغاز کر دیا ہے۔ میڈیا ذرائع کے مطابق نتھیا گلی کے رہائشی شکیل ولد عبد الرشید نے اپنے بیٹے کے ہمراہ بیٹے کی ہی مدعیت میں ایف آئی آر درج کروائی جس میں بتایا گیا کہ میں گذشتہ چھ ماہ سے جامعہ مسجد نتھیا گلی میں حفظ کر رہا ہوں ، ایک دن رات کو میں اپنے کمرے میں دیگر ساتھیوں کے ہمراہ سویا ہوا تھا کہ جامعہ مسجد کے امام قاری شوکت ہمارے پاس آئے اور مجھے سویا ہوا اُٹھا کر اپنے ساتھ کمرے میں لے گئے۔










بچے نے اپنے بیان میں کہا کہ اپنے کمرے میں لے جا کر قاری شوکت نے مجھ سے زبردستی جنسی زیادتی کی اور مجھے دھمکاتے ہوئے کہا کہ اگر اس حوالے سے کسی کو بتایا تو میں تمہیں جان سے مار دوں گا۔ اس دروان میں دوبارہ اپنے کمرے میں واپس آیا اور روتا ہوا سو گیا۔ جب صبح نماز کے لیے اُٹھا تو دوبارہ قاری شوکت نے مجھے کہا کہ رات کو مزہ آیا اگر اس واقعہ کے حوالے سے کسی سے کچھ بھی کہا تو جان سے جاؤ گے۔


بچے نے کہا کہ قاری کی یہ بات سُن کر میں نے اگلے روز چُھٹی کے بعد ہی مسجد سے بھاگ کر اپنے گھر کا رُخ کیا اور سارا ماجرا اپنے والد کو سنا دیا۔ والد کے ہمراہ تھانے جانے پر اس واقعہ کی اطلاعی رپورٹ درج کروائی جس پر پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے ملزم قاری کو گرفتار کر کے اس کے خلاف مقدمہ درج کر کے تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ واضح رہے کہ قبل ازیں لاہور کے ایک مدرسے میں مفتی عزیز الرحمان کی بھی طالبعلم سے بد فعلی کی ویڈیو سامنے آئی تھی۔
 

khipk

Senator (1k+ posts)


364-21-1.jpg
yeh jo khota bol raha hay kay aap ko agay janay kee ijazat nahi isay bhi giriftar kero. In kay baap ka mulk hay kay is say ijazat leni paray gee
 
Sponsored Link

Featured Discussion Latest Blogs اردوخبریں