ماڈل حرا خان سے غیر اخلاقی آڈیشن کا مطالبہ کرنے والا ڈائریکٹر کون تھا؟

1hirachat.jpg

شوبز انڈسٹری میں نئے قدم رکھنے والی ماڈل واداکارہ حرا خان نے سوشل میڈیا پر بتایا کہ انہوں نے کسی ساتھی اداکارہ کے کہنے پر ایک ڈائریکٹر سے کام کے سلسلے میں رابطہ کیا تو اس نے نامناسب لباس میں آڈیشن دینے کا مطالبہ کر دیا۔ ماڈل حرا خان نے مذکورہ ڈائریکٹر کے ساتھ کی جانے والی گفتگو کے سکرین شاٹ بھی شیئر کیے۔

جیو نیوز کے آن لائن پلیٹ فارم پر حرا خان نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ انہیں اس شخص نے نجی مقام پر بلا کر انہیں کروپ ٹاپ حالت میں کیٹ واک کرنے اور ڈانس کرنے کا کہا جس پر وہ ڈٹ گئیں اور اسے ایکسپوز کرنے کا سوچا۔ انہوں نے کہا کہ اب پتا چلا ہے کہ جس سے رابطہ ہوا وہ اصل ڈائریکٹر نہیں بلکہ وہ تو صرف اس کا نام استعمال کر کے لڑکیوں کو استعمال کر رہا تھا۔

حرا نے واقعے سے متعلق بتایا کہ ’ڈرامے کے سیٹ پر ساتھی اداکارہ نے ایک نمبر دیا اور کہا کہ اس ڈائریکٹر کے ساتھ میں پہلے کام کر چکی ہوں، یہ نئے چہروں کی تلاش میں ہیں، ان سے رابطہ کرو لیکن دراصل وہ اداکارہ بھی نہیں جانتی تھیں کہ ان سے فیک اکاؤنٹ کے ذریعے رابطہ کیا گیا ہے اور وہ جسے ڈائریکٹر سمجھ رہی ہیں وہ کوئی اور ہے۔

حرا خان نے کہا کہ اس شخص سے میرا رابطہ 9 اکتوبر کو ہوا، وہ شخص مجھ سے کافی پراعتماد لہجے میں بات کر رہا تھا، انسٹاگرام پر اس کی فالوونگ بھی کافی تھی، کہیں سے نہیں لگ رہا تھا کہ وہ کوئی فیک اکاؤنٹ ہے، میری اس شخص سے بات شروع ہوئی اور فون کال 20 منٹ طویل ہوگئی۔

ماڈل نے کہا کہ مجھے سمجھ نہیں آرہا تھا کہ گفتگو کس سمت میں جارہی ہے، مجھ سے بار بار نامناسب لباس پہن کر آڈیشن دینے کا مطالبہ کیا جارہا تھا، اس شخص نے یہ بھی کہا کہ آپ کا آڈیشن میں خود ریکارڈ کروں گا۔ وہ شخص مجھ سے کہہ رہا تھا کہ ڈرامے میں لیڈ رول حاصل کرنے کیلئے اپنی جگہ بنانی پڑتی ہے، بہت کچھ کرنا پڑتا ہے۔

266617-7420202-updates.jpg


انہوں نے کہا کہ مجھے ان کی یہ بات سمجھ نہیں آئی اور میں نے کچھ وقت میں جواب دینے کا بہانہ کرکے فون بند کردیا، اس سے پہلے کبھی کسی نے اس قسم کا مطالبہ نہیں کیا تھا اور نا ہی کسی نے مخصوص طرز کے کپڑوں کی فرمائش کی، میں کافی شش و پنج میں مبتلا تھی کیونکہ ڈائریکٹر کا نام کافی بڑا تھا اور دوست نے نمبر دیا تھا جب کہ ان کا لب و لہجہ بھی کافی غیر معمولی تھا۔

اداکارہ نے مزید بتایا کہ میں نے کال بند کرکے انہیں ٹیکسٹ کیا اور کہا کہ جو آپ چاہتے ہیں میں وہ نہیں کرسکتی، علاوہ ازیں اگر آپ کو میری اداکارانہ صلاحیت جاننے کیلئے کسی قسم کے ویڈیو کلپ کی ضرورت ہے تو وہ آپ کو دے دوں گی۔ میں نے جان بوجھ کر کال بند کرکے میسج کا انتخاب کیا کیونکہ مجھے یقین تھا کہ میری کال کا کوئی بھروسہ نہیں کرے گا۔

ماڈل حرا خان نے اپنے طور پر تصدیق کرنے کیلئے کہ کہیں یہ واقعی وہی ڈائریکٹر نہ ہوں جن کے نام پر اکاؤنٹ تھا، میں نے ایک دو ڈائریکٹرز سے ان کا نمبر لیا بغیر کسی کو بتائے کہ ماجرا کیا ہے، تصدیق کرنے پر پتا چلا کہ واقعی وہ ایک فیک اکاؤنٹ تھا۔ انسٹاگرام پر پوسٹ لگانے کے بعد مجھے متعدد لڑکیوں نے میسجز کیے اور بتایا کہ انہیں بھی اداکاری کا جھانسہ دے کر ایسے مطالبات کیے گئے تھے کہ ہمیں کیٹ واک کی تصاویر بھیجیں، ڈانس کرکے دکھائیں جب کہ تمام نمبرز پاکستانی ہیں۔

اداکارہ نے خدشہ ظاہر کیا کہ شاید یہ کوئی گروپ ہے جو لڑکیوں سے ایسی غیر اخلاقی حرکات و سکنات کرواکے ان کی تصاویر اور ویڈیوز حاصل کرتا ہے، اس قسم کا واقعہ پہلے بھی ہوچکا ہے۔
 
Advertisement

Saboo

Prime Minister (20k+ posts)
ہاہاہا...اسے کاموں میں غیر اخلاقی کچھ بھی نہیں ہوتا سواے اس کے کہ آپ
ڈایرکٹر کو ناں کر دیں ؟ ہاہاہا اب اس میں کیا
 
Sponsored Link