پب جی تنازعہ:16 سالہ بیٹے نے سوتیلی والدہ کو نماز کی حالت میں قتل کردیا

waldih1h11i21.jpg


کراچی کے علاقے ملیر سعود آباد میں لڑکے نے سوتیلی ماں کو بےدردی سے قتل کر دیا۔ ملزم نے نماز کی حالت میں کھڑی خاتون پر چھری سے متعدد وار کیے جس کے نتیجے میں خاتون جاں بحق ہو گئی۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق ملیر کے علاقے آر سی ڈی گراؤنڈ کے قریب قتل کی لرزہ خیز واردات میں نوعمر سوتیلے بیٹے نے تیز دھار آلے سے کئی وار کر کے ماں کو قتل کر دیا، پولیس نے ملزم کو گرفتار کر کے آلہ قتل بھی برآمد کرلیا۔


کراچی پولیس کے مطابق انعام نامی شخص نے مدد گار 15 پر قتل کی واردات سے متعلق پولیس کو اطلاع دی تھی، جائے وقوعہ پر پولیس پہنچی تو کمرے میں بیڈ پر خون میں لت پت خاتون کی لاش پڑی تھی جس کی شناخت 39 سالہ عذرا زوجہ کامران کے نام سے ہوئی جبکہ اطلاع دینے والا شخص مقتولہ کا بھائی اور کھوکھر پارا کا رہائشی ہے۔


انہوں نے بتایا کہ جائے وقوعہ کا معائنہ کیا تو خون کے دھبے پہلی منزل پر جانے والی سیڑھیوں پر بھی پائے گئے، پولیس نے قتل کے الزام میں مقتولہ کے سوتیلے بیٹے 17 سالہ زین کو حراست میں لیا تو اُس نے جرم کا اعتراف کیا جس کے بعد موقع پر موجود اہلکاروں نے آلہ قتل بھی برآمد کرلیا۔

پولیس کے مطابق مقتولہ کا شوہر پرائیویٹ فیکٹری کس مکازم ہے پہلی بیوی کا چند سال قبل انتقال ہوگیا تھا جبکہ کامران نے اس خاتون سے 3 ماہ قبل نکاح کیا تھا۔ مقتولہ بھی طلاق یافتہ تھی جس کی پہلی شادی پنجاب میں ہوئی تھی۔

پولیس کی ابتدائی تحقیقات میں یہ بات سامنے آئی کہ گھریلو چپقلش کے باعث نوعمر ملزم زین نے اپنی سوتیلی ماں کا قتل کیا اور جس چھری سے قتل کیا گیا ہے وہ 600 روپے کی خرید کر لایا تھا۔

نجی چینل سماء کے مطابق 16 سالہ ملزم پب جی کا شوقین تھااور امتحانات سے قبل اس سے موبائل فون واپس لے لیا گیا تھا جس کا اسے بہت غصہ تھا۔

ملزم کا خیال تھا کہ اس پر پب جی کھیلنے پر پابندی اسکی ماں نے لگوائی

ملزم نے بتایا کہ اُس نے سوتیلی ماں پر اس وقت تیز دھار آلے کے وار سے حملہ کیا جب وہ نماز پڑھ رہی تھی۔
 
Advertisement
Sponsored Link