کامران خان ڈرامے کے ایک سین کو ڈکیٹی سمجھ بیٹھے، دلچسپ تبصرے

kaman-11j2hh21.jpg


اپنے پروگرام کو ملک کا سب سے معتبر کرنٹ افیئرز شو کہنے والے اینکر کامران خان نے لوٹ مار کی نشاندہی کیلئے فلمائے گئے سین کو اصل سمجھ کر شیئر کر دیا۔ ان کی ٹوئٹ پر سوشل میڈیا صارفین نے کہا کہ وہ ایک فلم کی شوٹنگ کیلئے ریکارڈ کیے گئے سین کو اصل سمجھ بیٹھے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سینئر اینکر پرسن کامران خان جو کہ دنیا نیوز پر "دنیا کامران خان کے ساتھ" کے نام سے شو کرتے ہیں انہوں نے کراچی میں راہزنی کی وارداتوں کی جانب توجہ مبذول کراتے ہوئے ایک ویڈیو شیئر کی جس میں ڈاکو کار سوار افراد کو دن دہاڑے لوٹ رہا ہے، تاہم یہ ویڈیو اصلی نہیں ہے۔ بلکہ ایک فلم کیلئے ریکارڈ کیا گیا ایک سین ہے۔


انہوں نے اس کے کیپشن میں لکھا کہ خدارا کراچی پولیس سندھ رینجرز ہوش میں آئے کراچی میں بندوق کی نوک پر لوٹ مار کے یہ بھیانک مناظر اس سال کے پہلے 22 دنوں میں ڈھائی ہزار بار دیکھے گئے ہر گھنٹہ پانچ سات خاندان دہشت گردی کا شکار ہو رہے ہیں کئی کو موت کے گھاٹ اتار دیا، پولیس رینجرز کے کانوں پر جوں نہیں رینگ رہی۔

مگر یہ ویڈیو تو جھوٹی ثابت ہوئی اور اس کی نشاندہی کرنے والے صارفین نے کہا کہ یہ ڈاکے کا اصل واقعہ نہیں، عکس بندی ہے۔


رب نواز بلوچ نے کہا کہ انویسٹی گیٹو جرنلزم کے نااہل بیٹے ملک کے بڑے ٹینکر کو ڈرامے کی شوٹنگ اور حقیقت میں کوئی فرق نظر نہیں آیا نہ تصدیق کی اب سمجھ جائیں ان کے تجزیے، نالائقی کی بھی کوئی حد ہوتی ہے۔


سادات یونس نے کہا ان صاحب کے پاس 38 سال کا صحافتی تجربہ ہے، ایک ڈرامہ شوٹنگ کی ویڈیو کو ڈکیتی کہہ کر شئیر کر دیا۔ اندازہ لگائیں باقی خبروں کے بارے میں انکی تحقیق کا عالم کیا ہو گا۔


یاسمین کریمی نے لکھا کراچی میں ڈرامہ کی شوٹنگ چل رہی تھی اور اس پر اینکر صاحب تشویشناک صورتحال پر تشویش کرتے ہوئے۔


صحافی شبیر واہگڑا نے لکھا کامران صاحب نے ڈرامے کی شوٹنگ کی وڈیو شیئر کر دی۔


صحافی عمر قریشی کا کہنا تھا کامران صاحب یہ تو کسی ڈرامے یا فلم کی شوٹنگ ہے۔


اظہر خان نے انہیں مشورہ دیا کہ وہ اس کو ڈیلیٹ کر دیں کیونکہ اس سے وہ اپنی کم علمی ظاہر کر رہےہیں اگر وہ یہی چاہتے ہیں تو رہنے دیں۔

 
Advertisement

vicahmed99

Minister (2k+ posts)
in chotiye anchors ko koi na koi pagal bana jata hey...................without social media they were used to tell lie in broad day light but now they get slap on the face immediately.
Sahih kuttay wali hoti hey in key saaath
 

hello

Minister (2k+ posts)
آج سمیت چند دنوں کی خبروں نے اس ملک کی صحافت کو ننگا کردیا


اینکر نسیم زہرہ کا جھوٹی خبر مہاتیر محمد کا ٹویٹ کرنا اور پھر اس پر
وزیر اعظم کو اس پر جنازہ میں شریک ہونے کی نصحتیں کرنا

دوسری طرف روف کلاسرا کا عمران خان ایک طویل پروگرام میں سے اپنے
مطلب کا ایک چھوٹا سا کلپ نکال کر اسے خاص رنگ دے کر لچ تلنے کی ناکام
کوشش کرنا

محمد مالک کا شہباز گل کو اس کی ڈگری پر اس کی مادر علمی پر بہتان لگانا
کہ وہ ملیشاء کی صفحہ اول کی یونیورسٹی جعلی ہے جب شہباز گل نے آئنہ
دیکھا یا تو چیخنا چلانا شروع کر دیا اس نے میرے ساتھ بدتمیزی کی میں صحافی
ہوں لہذا بہتان لگانے کا لائسنس میرے پاس ہے

حلفیہ بیان پر انصار عباسی کا موقف کہ میں نے کسی تصدیق کے بغیر ججوں
ہائی کورٹس پر کیچر اچھالا لیکن اس سب کے بعد بھی میں قصور وار نہیں کیو نکہ میں
صحافی ہوں لہذا میرے پاس کسی کی پگڑی اچھالنے کا لائسنس ہے دلیل
میرا عمل چاہے جتنا مرضی بے شرموں والا ہو لیکن نیت صاف تھی
 

Digital_Pakistani

Chief Minister (5k+ posts)
The tweet of Kamran Khan is still there, doesn't feel any shame. Naseem Zehra was better she made a false tweet but alter apologized over Manhater Mohammed's news.
 

Faraqlit

Senator (1k+ posts)
These so called journalist, born with haram sperm and conceived in haram systems.

All these BC including Patwaris, the real filth of corrupt system.
 
Sponsored Link