کیوی ٹیم کے اچانک سیریز منسوخ کرنے کے فیصلے پر غیرملکی کھلاڑی بھی برہم

1.jpg


سابق ملکی اور غیر ملکی کرکٹرز نے نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ کے فیصلے کو حیران کن قرار دیتے ہوئے مایوسی کا اظہار کردیا، لیجنڈری وسیم اکرم نے کہا کہ پاکستان کرکٹ کیلیے محفوظ ترین ملک ہے،مکمل کہانی نہیں بتائی جارہی،فاسٹ باؤلر حسن علی نے کہا کہ فینز کی افسردگی خوشیوں میں بدلیں گے، فاسٹ بولر حارث رؤف نے کہا کہ سیریز منسوخی سے غلط روایت قائم ہوگئی۔


جنوبی افریقا کے ڈیوڈے ویزے کہتے ہیں کہ پاک آرمی دنیا کی بہترین فورس ہے، نیوزی لینڈ فیصلے پر نظر ثانی کرے،نیوزی لینڈ کے سابق کرکٹر گرانٹ ایلیٹ نے فیصلے کو پلیئرز اور فینز کیلئے بری خبر قرار دیا۔



سابق کیوی کرکٹر اور کمنٹیٹر ڈینی موریسن نے ٹوئٹ کیا کہ کئی بار پاکستان کا دورہ کیا،ہمشیہ اچھا لگا،کرکٹ میں بھی خوب مزہ آیا، آج اِن کیلیے بہت دکھ محسوس ہورہاہے۔


ویسٹ انڈیز کے سابق کپتان ڈیرن سیمی نے بھی کیویز کو آئینہ دکھا دیا،کہا چھ سال سے پاکستان آنا جانا ہے۔ کھیلتے اور گھومتے پھرتے ہیں،سیکیورٹی کا کوئی مسئلہ نہیں رہا، دورے خوشگوار رہے،نیوزی لینڈ کا فیصلہ انتہائی مایوس کن ہے۔



سری لنکن کرکٹ ٹیم کے آل راؤنڈر اینجلو پریرا نے کہا کہ دو سال پہلے انہوں نے پاکستان کا دورہ کیا، ایمانداری کی بات ہے ٹیم کو بہت اچھی طرح رکھا گیا، خود کو ہر طرح سے محفوظ تصور کیا۔



نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم آج شام واپس روانہ ہوگی، خصوصی طیارہ اسلام آباد ایئرپورٹ پہنچے گا۔ سول ایوی ایشن نے اجازت دے دی ہے، طیارہ پہلے متحدہ عرب امارات اس کے بعد نیوزی لینڈ روانہ ہوگا،گزشتہ روز کیوی ٹیم نے اچانک سیکیورٹی خدشات کا بہانہ بناکر سیریز منسوخ کردی تھی۔
 
Advertisement

sawan1

Senator (1k+ posts)
یہ سب ریلو کٹے ہیں ۔
اچھا ہوا قوم کا وقت اور پیسہ بچا
 
Sponsored Link