Can I hold Quran and recite during salah?

There is only 1

Chief Minister (5k+ posts)
لوگوں کو یہ نہیں پتہ کہ کسی بھی مسلے میں صاحب علم شخص سے فتویٰ لینا کیوں ضروری ہے ؟
یعنی اگر کوئی نماز سے متعلق فتویٰ دینا چاہتا ہے تو اسے نماز سے متعلق تمام احکامات ، توجیہات ، آیات ، احادیث وغیرہ کا علم ہے یا نہیں . اور یہاں غامدی صاحب خود فرما رہے ہیں کہ وہ خافظ قرآن نہیں ہیں اور پھر بھی فتویٰ دے رہے ہیں
 

Diabetes

Councller (250+ posts)
لوگوں کو یہ نہیں پتہ کہ کسی بھی مسلے میں صاحب علم شخص سے فتویٰ لینا کیوں ضروری ہے ؟
یعنی اگر کوئی نماز سے متعلق فتویٰ دینا چاہتا ہے تو اسے نماز سے متعلق تمام احکامات ، توجیہات ، آیات ، احادیث وغیرہ کا علم ہے یا نہیں . اور یہاں غامدی صاحب خود فرما رہے ہیں کہ وہ خافظ قرآن نہیں ہیں اور پھر بھی فتویٰ دے رہے ہیں
Hafz e quran ka fatwa se kya taluq. Hafz e quran to ratu hota hai, chahe quran ki samajh ho ya na ho, hadees ka pata ho na ho, bas quran rut laya, meaning pata ho ya na ho.
 

There is only 1

Chief Minister (5k+ posts)

Hafz e quran ka fatwa se kya taluq. Hafz e quran to ratu hota hai, chahe quran ki samajh ho ya na ho, hadees ka pata ho na ho, bas quran rut laya, meaning pata ho ya na ho.

میرے کمنٹ میں زور "صاحب علم " پر تھا خافظ قرآن پر نہیں
اور کامن سینس کی بات ہے کہ "صاحب علم " وہی ہو سکتا ہے جسے زیر غور مسلے سے متعلق مواد یاد ہو
یعنی اگر کسی دینی مسلے سے متعلق فتویٰ دے رہا ہو تو قرآن و حدیث اسے ازبر ہوں یعنی یاد ہوں
 

taban

Chief Minister (5k+ posts)
لوگوں کو یہ نہیں پتہ کہ کسی بھی مسلے میں صاحب علم شخص سے فتویٰ لینا کیوں ضروری ہے ؟
یعنی اگر کوئی نماز سے متعلق فتویٰ دینا چاہتا ہے تو اسے نماز سے متعلق تمام احکامات ، توجیہات ، آیات ، احادیث وغیرہ کا علم ہے یا نہیں . اور یہاں غامدی صاحب خود فرما رہے ہیں کہ وہ خافظ قرآن نہیں ہیں اور پھر بھی فتویٰ دے رہے ہیں
چلو ہم غامدی صاحب کے فتوے کو نہیں مانتے آپ جیسے صاحب علم کو فالو کریں گے اب آپ فتوی دیں آپ کو تو سب کچھ ازبر ہے نا
 

taban

Chief Minister (5k+ posts)

میرے کمنٹ میں زور "صاحب علم " پر تھا خافظ قرآن پر نہیں
اور کامن سینس کی بات ہے کہ "صاحب علم " وہی ہو سکتا ہے جسے زیر غور مسلے سے متعلق مواد یاد ہو
یعنی اگر کسی دینی مسلے سے متعلق فتویٰ دے رہا ہو تو قرآن و حدیث اسے ازبر ہوں یعنی یاد ہوں
آپ کی گفتگو میں کامن سینس کوٹ کوٹ کر بلکہ ایک دفعہ پھر کوٹ کر بھرا ہوا ہے
 

There is only 1

Chief Minister (5k+ posts)

چلو ہم غامدی صاحب کے فتوے کو نہیں مانتے آپ جیسے صاحب علم کو فالو کریں گے اب آپ فتوی دیں آپ کو تو سب کچھ ازبر ہے نا

آپ کی گفتگو میں کامن سینس کوٹ کوٹ کر بلکہ ایک دفعہ پھر کوٹ کر بھرا ہوا ہے
میری کس بات سے آپ کو لگا کہ میں عالم ہونے کا دعوا کر رہا ہوں ؟
میں تو بس اتنا سمجھا رہا تھا کہ عالم کا ہی فتویٰ لیا کریں ایرے غیرے کا نہیں

 

taban

Chief Minister (5k+ posts)


میری کس بات سے آپ کو لگا کہ میں عالم ہونے کا دعوا کر رہا ہوں ؟
میں تو بس اتنا سمجھا رہا تھا کہ عالم کا ہی فتویٰ لیا کریں ایرے غیرے کا نہیں


جو بندہ غامدی صاحب پہ اعتراض کر تا ہے تو ظاہر ہے کسی برتے پہ کرتا ہوگا اس لئے یہ گمان ہوا کہ آپ عالم ہیں براہ کرم ہمارا یہ یقین نہ توڑئیے گا
 

There is only 1

Chief Minister (5k+ posts)

جو بندہ غامدی صاحب پہ اعتراض کر تا ہے تو ظاہر ہے کسی برتے پہ کرتا ہوگا اس لئے یہ گمان ہوا کہ آپ عالم ہیں براہ کرم ہمارا یہ یقین نہ توڑئیے گا

میں غامدی صاحب پر اعتراض قرآن کی آیات کی روشنی میں کرتا ہوں جس کے تحت یوں ہی کسی کی پیروی نہیں کی جا سکتی
2:166
جب وہ سزا دے گا اس وقت کیفیت یہ ہوگی کہ وہی پیشوا اور رہنما، جن کی دنیا میں پیروی کی گئی تھی، اپنے پیروؤں سے بے تعلقی ظاہر کریں گے، مگر سزا پا کر رہیں گے اور ان کے سارے اسباب و وسائل کا سلسلہ کٹ جائے گا
. . . . . .
[4:59]
اے لوگو جو ایمان لائے ہوئے، اطاعت کرو اللہ کی اور اطاعت کرو رسول کی اور اُن لوگوں کی جو تم میں سے صاحب امر ہوں، پھر اگر تمہارے درمیان کسی معاملہ میں نزاع ہو جائے تو اسے اللہ اور رسول کی طرف پھیر دو اگر تم واقعی اللہ اور روز آخر پر ایمان رکھتے ہو یہی ایک صحیح طریق کار ہے اور انجام کے اعتبار سے بھی بہتر ہے
 

Mughal1

Chief Minister (5k+ posts)
khudaa ke bando quraan ke saath mazaaq kab band karo ge?

khudaa ne aap ko ilm haasil kerne ke liye chaar tareeqe diye hen un per oboor haasil karo agar aap ne quraan ko theek tarah se samajhna hai. agar aap ko un tareequn se koi sarokaar hi nahin to aap quraan ko samajh kaise sakte hen? lihaaza khudaa ki di hui aqal se kaam len aur quraan ko padhne sunanen ki fikar ke bajaaye us ko theek tarah se samajhne ki fiker karen.

khudaa ne quraan mehz padhne sunane ke liye nahin diya hai theek tarah se samajh ker drust tareeqe se amal kerne ke liye diya hai. phir amal bhi woh nahin jin ko aap logoon ne apnaa liya hai balkeh us maqsad ke mutaabiq amal jo quraan ne khud bataaya hai.

quraan khudaa ne kis liye diya hai? aik behtareen insaani maashra banaane ke liye issi duniya main jisse khudaa aur insaaniyat ki her jaga jay jay kaar ho. yaani her taraf khudaa ki aur insaanu badayee ke danke bajen. yahee khudaa ka is duniya ko peda kerne ka asal maqsad hai. yahee wajah hai khudaa ne insaanu ko peda kiya hai aqlo samajh waalaa banaa ker.

kia aap apni aankhun se nahin dekh rahe insaan kitni kamaal shai khudaa ne peda ki hai keh is duniya main woh kia kia ajeebo ghareeb salahiyaten dikhaa rahaa hai?

quraan khudaa ne insaanu ko ahmaq banaane ke liye nahin diya hai balkeh isse bhi aage le jaane ke liye diya gayaa hai jahaan tak insaan pohnch chuka hai. lihaaza ilm haasil kerne ke tareequn per khoob ghoro fiker karo aur in behuda mullaan ki betuki baatun se niklo jin ka na koi sar hai na paer.

khud apni zindagi per ghor karen keh aap ne jo kuchh ilm bhi aap ke paas hai woh seekha kaise hai. yahaan se baat aage le ker jaayen yahaan tak keh aap wahee tak pohnchen aur phir us ko theek tarah se samajhne ke tareequn per pohnchen. tab jaa ker baat bane gi. warna aap inhi gumrahiyun main bhatakte rahen ge jin main bhatak rahe hen ghamidi sb hi ki tarah.

aap ghamidi sb se poochhen ilm haasil kerne ke kitne tareeqe hen, woh aap ko nahin bataa saken ge is liye keh in bunyaadi baatun per unhune apni zindagi main aap hi ki tarah kabhi socha hi nahin hai.

ghamidi sb ne un tareequn hi ka inkaar kiya hai jo insaanu ke ilm haasil kerne ka zariya hen aage aap khud soch len. mera dawaa hai keh khud aap ne bhi kabhi un tareequn per ghor nahin kiya hai haalan keh aap unhi tareequn se her baat seekhte aaye hen aaj tak aur aage bhi unhi tareequn hi se seekhen ga. ye farq hai meri aur aap ki soch ki gehrayee main.

agar aap bhi meri tarah un tareequn per ghor kerte to kabhi bhi aap mullaan ke ghulaam na bante aur deene islam ki dosti ka dawaa ker ke us ke saath dushmani na kerte jo aap qadam qadam per ker rahe hen aur yun aap khud apni zindagiyan barbaad ker rahe hen. lihaaza apni zindagiyun per ghor karen keh aap yahaan pohnche kaise.
 

taban

Chief Minister (5k+ posts)

میں غامدی صاحب پر اعتراض قرآن کی آیات کی روشنی میں کرتا ہوں جس کے تحت یوں ہی کسی کی پیروی نہیں کی جا سکتی
2:166
جب وہ سزا دے گا اس وقت کیفیت یہ ہوگی کہ وہی پیشوا اور رہنما، جن کی دنیا میں پیروی کی گئی تھی، اپنے پیروؤں سے بے تعلقی ظاہر کریں گے، مگر سزا پا کر رہیں گے اور ان کے سارے اسباب و وسائل کا سلسلہ کٹ جائے گا
. . . . . .
[4:59]
اے لوگو جو ایمان لائے ہوئے، اطاعت کرو اللہ کی اور اطاعت کرو رسول کی اور اُن لوگوں کی جو تم میں سے صاحب امر ہوں، پھر اگر تمہارے درمیان کسی معاملہ میں نزاع ہو جائے تو اسے اللہ اور رسول کی طرف پھیر دو اگر تم واقعی اللہ اور روز آخر پر ایمان رکھتے ہو یہی ایک صحیح طریق کار ہے اور انجام کے اعتبار سے بھی بہتر ہے
میں نے پہلے بھی عرض کیا ہے کہ آپ کامن سینس کے بادشاہ ہیں ذرا تفصیل سے بتائیں کہ اس وڈیو کے کس حصے میں غامدی صاحب نے اللہ اور رسول صلعم کی نافرمانی کی بات کی ہے
 

There is only 1

Chief Minister (5k+ posts)

میں نے پہلے بھی عرض کیا ہے کہ آپ کامن سینس کے بادشاہ ہیں ذرا تفصیل سے بتائیں کہ اس وڈیو کے کس حصے میں غامدی صاحب نے اللہ اور رسول صلعم کی نافرمانی کی بات کی ہے

میرے پہلے کمنٹ میں ہی میں نے بیان کر دیا ہے کہ غامدی صاحب خود قبول کر رہے ہیں کہ وہ پورے قرآن کے خافظ نہیں ہیں اور ایسا شخص کوئی فتویٰ نہیں دے سکتا
اور یہ بات بھی یاد رہے کہ فتویٰ وہی دے سکتا ہے جو قرآن کا خافظ ہو اور ساتھ ہی ساتھ عامل بھی ہو یعنی کسی مسلے سے متعلق اس سے پوچھا جائے تو فورا اس مسلے سے متعلق تمام کی تمام آیات ، ان کا مطلب ، تفسیر و تاویل وغیرہ وہ بیان کر دے
ایسے شخص کا فتویٰ قرآن کی کسی آیت سے نہیں ٹکراتا ، اور قرآن میں ایسے شخص کی پیروی کا ہی حکم ہے
قرآن میں ایسے اشخاص کو اولی الامر ، اہل ذکر ، امام مبین ، اور سچے لوگ کہہ کر پکارا گیا ہے
اور ان کو چھوڑ کر کسی دوسرے سے رہنمائی لینے والے کے لئے جہنم کی وعید ہے
. . . .
نوٹ : میں غامدی صاحب کے فتویٰ نہ دینے کی صلاحیت بلعموم کا ذکر کر رہا ہوں
 
Sponsored Link

Featured Discussion Latest Blogs اردوخبریں