بھارت:میٹرک کی17 طالبات کے ساتھ اسکول میں مبینہ زیادتی کی کوشش

india-school.jpg


بھارتی میڈیا کے مطابق اترپردیش کے ضلع مظفر نگر میں ایک اسکول کی17 طالبات پریکٹیکل امتحانات کیلئے قریبی گاؤں میں واقع اسکول میں گئیں جہاں انہیں رات دیر تک رکنا پڑا تو اس اسکول کے منیجر نے انہیں مبینہ طور پر نشہ آور مشروب پلا کر زیادتی کرنے کی کوشش کی۔

تفصیلات کے مطابق مظفر نگر میں واقع یوگیش سوریا دیو پبلک اسکول میں میں پڑھنے والی 17 لڑکیوں کو پریکٹیکل امتحانات کے لیے جی جی ایس اسکول لے جایا گیا جہاں ملزموں نے ان نابالغ لڑکیوں کا جنسی استحصال کرنے کی کوشش کی۔


پولیس نے اس معاملے میں دو ملزموں کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس معاملے میں لاپرواہی برتنے پر ایک پولیس افسر کو معطل کر دیا گیا ہے۔ مظفر نگر ضلع کے ایس ایس پی ابھیشیک یادو نے میڈیا کو بتایا کہ کہا کہ پورکاجی پولیس اسٹیشن کے انچارج ونود کمار سنگھ کو اس معاملے میں مبینہ طور پر لاپرواہی برتنے پر معطل کیا گیا ہے۔

یو پی پولیس کے مطابق ملزم یوگیش کمار چوہان اور ارجن سنگھ کے خلاف جنسی ہراسانی، نشیلی اشیا دینے کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

سینئر سپرنٹنڈنٹ آف پولیس نے یہ بھی بتایا کہ گھر والوں نے شکایت کی ہے کہ ملزم نے لڑکیوں کو دھمکی دی کہ وہ اس واقعہ کے بارے میں کسی کو نہ بتائیں۔ اہل خانہ کے مطابق جب وہ مقامی پولیس کے پاس پہنچے تو انہوں نے کوئی کارروائی نہیں کی جس کے بعد انہوں نے ایم ایل اے سے رابطہ کیا۔

والدین نے علاقائی ایم ایل اے سے رابطہ کیا جس کے بعد ملزم یوگیش کمار چوہان اور ارجن سنگھ کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا، حکام نے یقین دہانی کرائی کہ جلد ملزمان کی گرفتاری عمل میں آئے گی۔
 
Advertisement
Sponsored Link