بینک صارفین سے فراڈ :عدالت نے باپ، بیٹے اور بیٹی کو سزا سنادی

bank11211.jpg


کراچی کے نجی بینک کے صارفین کے ساتھ فراڈ کرنے والی بینک کی ریلیشن مینجر نیہا کو والد اور بھائی سمیت سزا سنادی گئی ہے جبکہ ایک ملزم رومان حسن کو ثبوتوں کے عدم موجودگی پر رہا کردیا گیا۔

جیو نیوز کی رپورٹ کے مطابق کراچی کی بینکنگ کورٹ نے نجی بینک کی پریمئر ریلیشن مینجر نیہا کو صارفین کے اکاؤنٹس سے پیسے نکال کر فیملی ممبرز کے اکاؤنٹس میں ٹرانسفر کرنے پر سزا سنادی ہے، عدالت نے ملزمان کی درخواست ضمانت کو فوری طور پر منسوخ کرنے کا حکم دیا اور انہیں جیل بھیج دیا۔

رپورٹ کے مطابق عدالت نے نیہا کے ساتھ ساتھ اس کے والد اور بھائی کو بھی سزا سنائی، عدالت نے نیہا کو 34 سال قید اور 15 کروڑ 7لاکھ روپے جرمانے کی سزاسنائی، ملزمہ کے والدضیا الحسن اور بھائی اشعر کو کو 14،14 سال قید50،50 لاکھ روپے جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔


عدالت نے اپنے فیصلے میں لکھا ہے کہ ملزمہ نیہا نے اپنی برانچ کے صارفین کے اکاؤنٹس سے پیسے نکال کر اپنے خاندان کے لوگوں کے اکاؤنٹس میں ٹرانسفر کیے ، ان پیسوں سے گھر والوں کیلئے گاڑیاں، زیورات خریدے گئے اور رہائشی فلیٹس کا کرایہ بھی ادا کیا جاتا رہا۔

واضح رہے کہ 2012 میں ایف آئی اے بینکنگ سرکل میں نجی بینک کی ریلیشن مینجر سمیت دیگر ملزمان پر 7 کروڑ کے فراڈ کا الزام عائد کیا گیا تھا، ایف آئی اے نے ملزمہ کے خلاف فراڈ کا مقدمہ درج کرتے ہوئے دیگر ملزمان کے ہمراہ اس کی والدہ کو بھی نامزد کیا تھا تاہم دوران ٹرائلز ان کا انتقال ہوگیا۔

دوسری جانب سرگودھا میں شہریوں کی جائیدادوں کا ریکارڈ ردی میں فروخت کردیا گیا جس پر سرکاری ریکارڈ فروخت کرنیوالے جونئیر کلرک کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

 
Advertisement
Last edited by a moderator:

Okara

Prime Minister (20k+ posts)
Lesson learned never do a corruption of less than few billions because u can be caught and punished and PM will not help u on humanitarian basis.
 

Visionartist

Senator (1k+ posts)
34 tkseem 3=11.4 years, 15 taqseem 3 = 5 sal- saza ziyada nahiyn hey. Recovery ka kiya bana hooyi ya nahiyn- bura soda nahiyn
 
Sponsored Link