نیب اور ایف آئی اے ختم،انہیں این آراو ٹو مل گیا : عمران خان

zardrai-nab-sehbaz-nro.jpg


پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں نیب اور الیکشن ترمیمی بل منظور ہونے پرچیئرمین تحریک انصاف عمران خان کا ردعمل سامنے آگیا، عمران خان کہتے ہیں آج سمجھ لیں نیب اور ایف آئی اے ختم ہو گئے ان کی چوریاں معاف ہوگئیں،انہیں آج این آر او ٹو انہیں مل گیا۔

عمران خان نے کہاکہ شہبازشریف اب نیب کا سربراہ بن جائےگا ایف آئی اےمیں شہبازشریف کیخلاف منی لانڈرنگ کیسز چل رہےہیں شہبازشریف اب نیب اور ایف آئی اےکا سربراہ بن جائےگا 2008سے2010تک چوری کی معافی کیلئے انہیں این آراو ٹو چاہیے تھا۔

عمران خان نے کہا کہ یہ نیب ترمیم کر کے ملک کومزیدنقصان پہنچانے جا رہے ہیں،ملک سنبھالا تو دیوالیہ ہونےکےقریب تھاہم نے مشکل وقت سےنکالا یہ کیا سمجھتے ہیں پوری قوم دیکھ رہی ہےاوریہ لوگ بچ جائیں گے۔


عمران خان نے کہا کہ قوم سےکہتاہوں یہ ہمارے لیے فیصلہ کن وقت ہے یہ لوگ الیکشن میں دھاندلی کی ابھی سےتیاری کررہے ہیں ای وی ایم کے ذریعے دھاندلی ختم ہورہی تھی انہوں نےنہیں ہونے دیا۔

چیئرمین پی ٹی آئی کا کہنا ہے کہ ایک این آراو ان لوگوں کو مشرف نے دیا تھا تو ان لوگوں نے پاکستان کے قرضے 4 گنا بڑھائے تھے این آراو ون کے بعد 10سال میں جوکرپشن کی یہ وہ معاف کرانے آئے تھے اب یہ نیب کاجوبل پاس کرینگے،اس سے زیادہ شرم کی بات ہونہیں سکتی۔

چیئرمین پی ٹی آئی نے کہا کہ دنیا کے کسی قانون میں کبھی ملزم بھی قاضی بنا ہے، آج سب سےزیادہ پاکستان کی عدلیہ کا ٹرائل ہے، یہ مذاق پوری قوم دیکھ رہی ہے،دنیا کا کوئی بھی قانون اس قسم کےقوانین کی اجازت دیتاہے،بڑےچوروں کو سہولت دی جارہی ہےتو چھوٹےچوروں کوبھی دیں۔

پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں الیکشن ترمیمی ایکٹ کثرت رائے سے منظور کرلیا گیا ہے، نیب آرڈیننس 1999میں مزید ترامیم کا بل بھی منظور کرلیا گیا۔

الیکشن ترمیمی بل 2022 وزیر پارلیمانی امور مرتضیٰ جاوید عباسی نے پیش کیا، جماعت اسلامی کے سینیٹر مشتاق احمد کی مجوزہ ترامیم مسترد کردی گئیں۔

بل کے تحت انتخابی ایکٹ2017 میں ترامیم کی گئیں، صدر مملکت نے الیکشن ترمیمی بل 2022 کو واپس پارلیمنٹ بھجوایا تھا،اس ترمیم کے ذریعے الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے استعمال کو ختم کر دیا گیا ہے۔

بل کے متن کے مطابق الیکٹرانک ووٹنگ مشین کو پائلٹ پراجیکٹ کے طور پر تجرباتی بنیادوں پر چلایا جائے گا،نیب آرڈیننس 1999ء میں مزید ترامیم کا بل بھی مشترکہ پارلیمنٹ کے اجلاس میں منظور کر لیا گیا،وزیر قانون سینیٹر اعظم نذیر تارڑ نے نیب آرڈیننس میں ترامیم کا بل پیش کیا۔
 
Advertisement

Scholar1

Chief Minister (5k+ posts)
پوری قوم کی تذلیل اس وقت ہوئی جب اسٹیبلشمنٹ اور عدلیہ نے ایک ایماندار لیڈر کی جگہ کرپٹ مافیا کی مدد کی۔ Humiliation of whole nation happened when establishment & judiciary helped replace an honest leader with corrupt mafia. ہمارے سابق فوجیوں کی صریح تذلیل صرف ایک شروعات ہے۔ یہ اعلیٰ سطحی تذلیل ہمارے تمام اداروں کو خاک میں ملا دے گی۔ اب یہ مافیا کے ہر سہولت کار
 

merapakistanzindabad

MPA (400+ posts)
NRO tab hi mil gaya tha jab jinko jail mein hona chahie tha oonko ektedaar pe beta dia..... history ye dour bhi yaad rakhegee....oor ye waqt sabit karega ke ke ya pakistan ki tareekh ka siah tareen dour tha!!!!!!!!!
 
Sponsored Link