کم عمر بچے بھی کورونا سے غیر محفوظ،ڈاکٹروں کی تنظیم کا بڑا مطالبہ

2pmacoronachild.jpg

کراچی سمیت ملک بھر میں 16 سال سے کم عمر بچے بھی کورونا سے متاثر ہونے لگے جب کہ ڈاکٹروں کی تنظیم پی ایم اے کا کہنا ہے کہ ملک میں اگلے دو سے تین ہفتے کورونا صورتحال کے حوالے سے بہت خطرناک ہیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ کنٹرول سینٹر (این سی او سی) کے مطابق 17جنوری کو 53 ہزار سے زیادہ ٹیسٹ کیے گئےجن میں سے 5 ہزار 34 مریضوں کے ٹیسٹ مثبت آئے۔ این سی او سی کے مطابق ملک میں اس وقت 800 سے زیادہ افراد کی حالت تشویش ناک ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا کی پانچویں لہر تیزی سے پھیل رہی اور سب سے زیادہ مثبت کیسز کی شرح کراچی میں 38.79 فیصد ہے۔ کراچی میں گزشتہ روز 7099 ٹیسٹ میں 2754 افراد میں کورونا کی تصدیق ہوئی۔


وفاقی وزارت صحت کے مطابق چوبیس گھنٹوں کے دوران کراچی میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 39فیصد کے قریب پہنچ گئی۔ سندھ کے دوسرے بڑے شہر حیدرآباد میں بھی کورونا کی شرح 14 فیصد تک پہنچ گئی ہے جب کہ لاہور میں کورونا کیسز کی شرح 12.87 فیصد اور گوجرانوالہ میں 15 فیصد ہے۔

ڈاکٹروں کی تنظیم پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن نے کورونا کے بڑھتےکیسز پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی میں مثبت کیسز کی شرح خطرناک حد تک بڑھ گئی ہے یہ تعداد صرف رجسٹرڈ کورونا کیسز کو ظاہر کرتی ہے، غیر رجسٹرڈ کیسز کی تعداد اس سے بھی کہیں زیادہ ہے۔

ڈاکٹروں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اومی کرون اپنی ہیئت تبدیل کرسکتا ہے اور زیادہ مہلک اور شدید ہوسکتا ہے، اس لیے حکومت فوری طور پرسیاسی جلسوں، دھرنوں اور اجتماعات پر پابندی عائد کرے۔ ایس او پیز پر عمل نہ کرنے والوں پر جرمانے اور سزائیں دی جائیں۔
 
Advertisement
Sponsored Link