راناشمیم کے بیان حلفی سے لاتعلقی اختیار کرنے پر مختلف صحافیوں کے تبصرے

rana-shamim112313.jpg


آج اسلام آباد ہائی کورٹ نے بیانِ حلفی پر توہینِ عدالت کیس کی سماعت ہوئی دوران سماعت چیف جسٹس نے سابق جج رانا شمیم سےسوال کیا کہ بتائیں کہ 3 سال بعد یہ بیانِ حلفی کس مقصد کے لیے دیا گیا؟ آپ نے عوام کا عدالت سے اعتماد اٹھانے کی کوشش کی، آپ نے جو کچھ کہنا ہے اپنے تحریری جواب میں لکھیں۔

اس پر سابق چیف جج رانا شمیم نے کہا کہ مجھے نہیں معلوم کہ جو بیانِ حلفی رپورٹ ہوا وہ کون سا ہے؟ میں پہلے رپورٹ کیا جانے والا بیانِ حلفی دیکھ لوں۔


راناشمیم کا یہ بھی کہنا تھا کہ تا نہیں میرا بیان حلفی کیسے لیک ہو گیا۔

اٹارنی جنرل نے کہا کہ جس شخص نے بیانِ حلفی دیا اسے یاد نہیں کہ بیانِ حلفی میں کیا لکھا ہے، اگر انہیں نہیں معلوم تو پھر یہ بیانِ حلفی کس نے تیار کروایا؟

رانا شمیم کے اس بیان کہ مجھے نہیں معلوم کہ جنگ اخبار نے کونسا بیان حلفی رپورٹ کیا ہے، مختلف تبصرے ہوئے۔

صحافی عدیل وڑائچ نے تبصرہ کیا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں رانا شمیم نے جنگ گروپ کو مشکل میں ڈال دیا، رانا شمیم نے عدالت میں بیان دیا کہ انکا بیان حلفی تو سیل تھا اور لاکر میں تھا جنگ کروپ نے کیسے چھاپ دیا؟ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ آپ نے تو ملبہ اخبار پر ڈال کر معاملہ پیچیدہ بنا دیا


عدیل راجہ نے رانا شمیم کو رانا گجنی شمیم قراردیتے ہوئے تبصرہ کیا کہ حلف نامہ دس نومبر کو دیا گیا، آج یاد نہیں۔۔ مگر تین سال پہلے کیا ہوا وہ حرف بحرف یاد ہے۔۔


بلاگر وقار ملک نے لکھا کہ جج شمیم کے بیان کے انہیں یاد نہیں بیان حلفی میں کیا لکھا ہے اس بات کی طرف اشارہ کر رہا ہے کہ جنہوں نے اپنے مفادات کیلئے بیان حلفی بنوایا انہوں نے پڑھنے کی اجازت نہیں دی اور دستخط کروا لئے۔۔


معروف شاعرہ نوشی گیلانی نے تبصرہ کیا کہ عجیب کردار ہیں یہ رانا شمیم بھی ۔۔ عدالت میں موجود حلف نامے سے انکارکر دیا۔۔اور اصل حلف نامہ لندن میں ہے جس کا متن بھی یاد نہیں موصوف کو ۔۔


سماء ٹی وی کی نیوزکاسٹرارم زعیم کا کہنا تھا کہ اخبار انتظامیہ نے بغیر تحقیق اور اجازت کے جج شمیم کا بیان چھاپ دیا تھا، جس سے ہائی کورٹ کے معزز جج صاحبان کی جانبداری اور ساکھ متاثر ہوئی ؟؟ اور جج شمیم کو اخبار والے حلف نامہ پر شک بھی ہے کہ وہ ٹھیک ہے کہ نہیں۔


بلاگر عمرانعام نے تبصرہ کیا کہ رانا شمیم نے عدالت میں موجود بیانِ حلفی سے اظہارِ لاتعلقی کر لیا۔ اصل بیانِ حلفی برطانیہ میں ہے جسکی کاپی میرے پاس موجود نہیں ہے اور نہ ہی مجھے اسکا متن یاد ہے۔ جو بیانِ حلفی اخبار میں چھپا وہ میں نے پڑھا نہیں ہے۔


ملیحہ ہاشمی کا کہنا تھا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ سے خبر آ رہی ہے کہ رانا شمیم آج عدالت میں اپنے بیان حلفی سے مکر گئے اور فرمایا کہ: "پتا نہیں میرا بیان حلفی کیسے لیک ہو گیا"

جی این این کے صحافی محمد عمران نے کاروائی کا احوال بتاتے ہوئے لکھا کہ سپر ہیرو بیٹے کی شاندار پرفارمنس کے بعد رانا شمیم نے کیس لڑنے کیلئے نیا وکیل چُن لیا ۔۔ سابق چیف جج رانا شمیم نے توہین عدالت کے نوٹس پر جواب جمع کرانے کیلئے مزید وقت مانگ لیا ۔ عدالت کے استفسار پر کہہ رہے ہیں کہ کچھ دن کا وقت دے دیں ، وکیل لطیف آفریدی کے زریعے جواب جمع کراؤں گا۔


اکبر نامی سوشل میڈیا صارف نے تبصرہ کیا کہ چند دن پہلے دیا گیا اپنا ہی بیان حلفی نہیں یاد لیکن کئی سال پہلے کی دوسرے بندے کی تیسرے بندے سے فون پر گفتگو یاد ہے اسکے تو 2 ہی مطلب ہو سکتے یا انکل شمیم نے کہانی گھڑی ہے یا پھر حلف نامہ کسی اور نے انکل شمیم کے نام سے لکھا ہے۔


مجتبیٰ نے کہا کہ جج شیمم عدالت میں پیشی پر فرما رہے کہ میں نے اپنا ہی بیانہ حلفی ابھی تک نہیں دیکھا


فرزانہ نے طنز کیا کہ تیری سرکار میں پہنچےتو سبھی سرخرو ہوئے

 
Advertisement
Last edited by a moderator:

arifkarim

Chief Minister (5k+ posts)
Premium Member
rana-shamim112313.jpg


آج اسلام آباد ہائی کورٹ نے بیانِ حلفی پر توہینِ عدالت کیس کی سماعت ہوئی دوران سماعت چیف جسٹس نے سابق جج رانا شمیم سےسوال کیا کہ بتائیں کہ 3 سال بعد یہ بیانِ حلفی کس مقصد کے لیے دیا گیا؟ آپ نے عوام کا عدالت سے اعتماد اٹھانے کی کوشش کی، آپ نے جو کچھ کہنا ہے اپنے تحریری جواب میں لکھیں۔

اس پر سابق چیف جج رانا شمیم نے کہا کہ مجھے نہیں معلوم کہ جو بیانِ حلفی رپورٹ ہوا وہ کون سا ہے؟ میں پہلے رپورٹ کیا جانے والا بیانِ حلفی دیکھ لوں۔

راناشمیم کا یہ بھی کہنا تھا کہ تا نہیں میرا بیان حلفی کیسے لیک ہو گیا۔

اٹارنی جنرل نے کہا کہ جس شخص نے بیانِ حلفی دیا اسے یاد نہیں کہ بیانِ حلفی میں کیا لکھا ہے، اگر انہیں نہیں معلوم تو پھر یہ بیانِ حلفی کس نے تیار کروایا؟

رانا شمیم کے اس بیان کہ مجھے نہیں معلوم کہ جنگ اخبار نے کونسا بیان حلفی رپورٹ کیا ہے، مختلف تبصرے ہوئے۔

صحافی عدیل وڑائچ نے تبصرہ کیا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں رانا شمیم نے جنگ گروپ کو مشکل میں ڈال دیا، رانا شمیم نے عدالت میں بیان دیا کہ انکا بیان حلفی تو سیل تھا اور لاکر میں تھا جنگ کروپ نے کیسے چھاپ دیا؟ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ آپ نے تو ملبہ اخبار پر ڈال کر معاملہ پیچیدہ بنا دیا


عدیل راجہ نے رانا شمیم کو رانا گجنی شمیم قراردیتے ہوئے تبصرہ کیا کہ حلف نامہ دس نومبر کو دیا گیا، آج یاد نہیں۔۔ مگر تین سال پہلے کیا ہوا وہ حرف بحرف یاد ہے۔۔


بلاگر وقار ملک نے لکھا کہ جج شمیم کے بیان کے انہیں یاد نہیں بیان حلفی میں کیا لکھا ہے اس بات کی طرف اشارہ کر رہا ہے کہ جنہوں نے اپنے مفادات کیلئے بیان حلفی بنوایا انہوں نے پڑھنے کی اجازت نہیں دی اور دستخط کروا لئے۔۔


معروف شاعرہ نوشی گیلانی نے تبصرہ کیا کہ عجیب کردار ہیں یہ رانا شمیم بھی ۔۔ عدالت میں موجود حلف نامے سے انکارکر دیا۔۔اور اصل حلف نامہ لندن میں ہے جس کا متن بھی یاد نہیں موصوف کو ۔۔


سماء ٹی وی کی نیوزکاسٹرارم زعیم کا کہنا تھا کہ اخبار انتظامیہ نے بغیر تحقیق اور اجازت کے جج شمیم کا بیان چھاپ دیا تھا، جس سے ہائی کورٹ کے معزز جج صاحبان کی جانبداری اور ساکھ متاثر ہوئی ؟؟ اور جج شمیم کو اخبار والے حلف نامہ پر شک بھی ہے کہ وہ ٹھیک ہے کہ نہیں۔


بلاگر عمرانعام نے تبصرہ کیا کہ رانا شمیم نے عدالت میں موجود بیانِ حلفی سے اظہارِ لاتعلقی کر لیا۔ اصل بیانِ حلفی برطانیہ میں ہے جسکی کاپی میرے پاس موجود نہیں ہے اور نہ ہی مجھے اسکا متن یاد ہے۔ جو بیانِ حلفی اخبار میں چھپا وہ میں نے پڑھا نہیں ہے۔


ملیحہ ہاشمی کا کہنا تھا کہ اسلام آباد ہائیکورٹ سے خبر آ رہی ہے کہ رانا شمیم آج عدالت میں اپنے بیان حلفی سے مکر گئے اور فرمایا کہ: "پتا نہیں میرا بیان حلفی کیسے لیک ہو گیا"

جی این این کے صحافی محمد عمران نے کاروائی کا احوال بتاتے ہوئے لکھا کہ سپر ہیرو بیٹے کی شاندار پرفارمنس کے بعد رانا شمیم نے کیس لڑنے کیلئے نیا وکیل چُن لیا ۔۔ سابق چیف جج رانا شمیم نے توہین عدالت کے نوٹس پر جواب جمع کرانے کیلئے مزید وقت مانگ لیا ۔ عدالت کے استفسار پر کہہ رہے ہیں کہ کچھ دن کا وقت دے دیں ، وکیل لطیف آفریدی کے زریعے جواب جمع کراؤں گا۔


اکبر نامی سوشل میڈیا صارف نے تبصرہ کیا کہ چند دن پہلے دیا گیا اپنا ہی بیان حلفی نہیں یاد لیکن کئی سال پہلے کی دوسرے بندے کی تیسرے بندے سے فون پر گفتگو یاد ہے اسکے تو 2 ہی مطلب ہو سکتے یا انکل شمیم نے کہانی گھڑی ہے یا پھر حلف نامہ کسی اور نے انکل شمیم کے نام سے لکھا ہے۔


مجتبیٰ نے کہا کہ جج شیمم عدالت میں پیشی پر فرما رہے کہ میں نے اپنا ہی بیانہ حلفی ابھی تک نہیں دیکھا


فرزانہ نے طنز کیا کہ تیری سرکار میں پہنچےتو سبھی سرخرو ہوئے

پٹواری آئیں اور اپنے سابق جج شمیم کا دفاع کریں
Siberite Rajarawal111 Bubber Shair Resilient Tit4Tat Landmark Shazi ji Awan S shujauddin
 
Sponsored Link