وزیراعظم عمران خان کے دورہ روس کی ٹائمنگ پر امریکی محکمہ خارجہ کا مؤقف

amr-khan-in-rissia.jpg


غیر ملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے ایک سوال کے جواب میں کہا ہے کہ وہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کے دورہ روس سے آگاہ ہیں مگر اس دورے کی ٹائمنگ پر کچھ نہیں کہہ سکتے۔

تفصیلات کے مطابق بدھ کو ایک پریس بریفنگ کے دوران نیڈ پرائس نے یہ بات اس وقت کہی کہی جب ماسکو میں پاکستانی وزیراعظم کی روسی صدر ولادی میر پیوٹن سے طے شدہ ملاقات کے بارے میں سوال کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ وہ پہلے ہی اسلام آباد کو یوکرین میں روس کی مزید کشیدگی پر واشنگٹن کے موقف سے آگاہ کر چکے ہیں اور "ہم نے انہیں جنگ پر سفارت کاری کی کوششوں سے آگاہ کیا ہے۔" امریکہ ایک خوشحال، جمہوری پاکستان کے ساتھ شراکت داری کو اپنے مفادات کے لیے اہم سمجھتا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم یقینی طور پر امید کرتے ہیں کہ جب ان مشترکہ مفادات کی بات آتی ہے تو ایک ایسے تنازع سے بچنے کیلئے جس سے پوری دنیا میں عدم استحکام پھیلے گا تو اس پر ہر ملک کی ذمہ داری ہے روسی صدر پیوٹن کے خیالات کیخلاف آواز اٹھائے۔ ہر ذمہ دار ملک کو اس پر تشویش کا مظاہرہ کرنا چاہیے۔

یاد رہے کہ روس کی جانب سے یوکرین کے علاقے ڈونباس میں آپریشن شروع کرنے کے اعلان کے بعد وزیراعظم عمران خان کا دورہ بین الاقوامی اہمیت اختیار کر گیا ہے۔ وہ واحد عالمی رہنما ہین جو یوکرین میں ابھرتے ہوئے بحران کے درمیان پیوٹن سے ملاقات کریں گے۔

واضح رہے کہ وزیراعظم دو روزہ دورے پر روس میں موجود ہیں۔ ماسکو ایئرپورٹ پہنچنے پر عمران خان کا روس کے ڈپٹی وزیر خارجہ نے استقبال کیا جب کہ وزیراعظم کو ائیر پورٹ پر گارڈ آف آنر بھی پیش کیا گیا۔ دو روزہ دورے کے دوران دونوں ملکوں میں وفود کی سطح پراہم ملاقاتیں اورمعاہدے ہوں گے۔

وزیراعظم عمران خان کی آج روسی صدر پیوٹن سےون آن ون ملاقات پاکستانی وقت کےمطابق دوپہر 3 بجے شروع ہونےکا امکان ہے اور وزیراعظم پاکستانی وقت کےمطابق آج شام 6 بجے روس کےڈپٹی وزیراعظم سےملاقات کریں گے۔

عمران خان آج دوسری جنگ عظیم میں جان دینے والے فوجیوں کی یادگار پر پھول چڑھائیں گے اور تاجربرادری سے بھی ملاقاتیں کریں گے۔ اس کے علاوہ وہ اسلامک سینٹر کا دورہ کریں گے اور پاکستانی میڈیاسے گفتگو کریں گے جب کہ آج رات ہی وطن واپس روانہ ہوں گے۔

 
Advertisement
Last edited:

Dr Adam

Prime Minister (20k+ posts)

تمام دنیا کو اس دورے پر آگ کیوں لگی ہوئی ہے؟؟؟

وجہ صاف ظاہر ہے کہ پچھلے تمام حکمران ان کی کاسۂ لیسی میں دن رات ایک کرتے رہے، انکے نوکروں کو بھی سرکاری پروٹوکول دیا جاتا رہا، اور یہ حکمران پاکستان سے لُوٹ کا سارا مال انکے ملکوں میں منتقل کرتے رہے اور ان کے منہ سے نکلی ہوئی ہر بات ان حکمرانوں کے لیے حکم کا درجہ رکھتی تھی اور الله سے زیادہ ان سے ڈرتے تھے

لیکن اب فلک کا مشاہدہ کچھ اور ہے . نیا تھانیدار ان سے نہیں بلکہ الله سے ڈرتا ہے اور الله سے اور اپنے عوام سے مدد کا طلبگار رہتا ہے . یہ بات ان کو گوارا نہیں . لیکن یہ اوپر والے کا فیصلہ ہے کہ اب اس کے حکم کی پیروی ہو گی نہ کہ ان لوگوں کی
 

kayawish

Chief Minister (5k+ posts)
Imran khan aur President Puttin ki mulakat :

PM Imran Khan : President Putin , we need Gas and oil from Russia :)

President Putin (in anger) : Bahen ke lodhe idar main ukarain se jung kar raha hoon aur tuje gas aur oil ki padhee hai 😂
 

Sohail Shuja

Chief Minister (5k+ posts)

تمام دنیا کو اس دورے پر آگ کیوں لگی ہوئی ہے؟؟؟

وجہ صاف ظاہر ہے کہ پچھلے تمام حکمران ان کی کاسۂ لیسی میں دن رات ایک کرتے رہے، انکے نوکروں کو بھی سرکاری پروٹوکول دیا جاتا رہا، اور یہ حکمران پاکستان سے لُوٹ کا سارا مال انکے ملکوں میں منتقل کرتے رہے اور ان کے منہ سے نکلی ہوئی ہر بات ان حکمرانوں کے لیے حکم کا درجہ رکھتی تھی اور الله سے زیادہ ان سے ڈرتے تھے

لیکن اب فلک کا مشاہدہ کچھ اور ہے . نیا تھانیدار ان سے نہیں بلکہ الله سے ڈرتا ہے اور الله سے اور اپنے عوام سے مدد کا طلبگار رہتا ہے . یہ بات ان کو گوارا نہیں . لیکن یہ اوپر والے کا فیصلہ ہے کہ اب اس کے حکم کی پیروی ہو گی نہ کہ ان لوگوں کی
ڈاکٹر صاحب، ایویں جناب خالی مقام نواز شریف کی ’’بیستی نہ خراب کرو‘‘۔ بھلا میاں صاحب کے ہوتے ہوئے روس کی جراٗت تھی کہ یوکرین پر حملہ کرے؟
 

miafridi

Prime Minister (20k+ posts)
Honest leadership take decisions in the best interest of the nation, rather than taking dictation from someone for pity gains.
 
Sponsored Link