پاکستانی فلم"لفنگے" پر سینسر بورڈ نے پابندی کیوں لگائی؟

10llafangy%20ban.jpg

عید الاضحیٰ پر نمائش کیلئے پیش کی جانے والی فلم"لفنگے" پر فحش ڈائیلاگز اور جنسی اشاروں کی وجہ سے پابندی عائد کردی ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق پابندی پاکستان بورڈ آف فلم سینسرز(سی بی ایف سی) نے ہارر کامیڈی فلم پر عائد کی اور الزام عائد کیا کہ فلم میں فحش ڈائیلاگ اور جنسی اشارے شامل کیے گئے ہیں۔

مشہور اداکار سمیع خان، مانی، سلیم معراج اور مبین گبول کی اس فلم کا ٹریلر گزشتہ ماہ جون کے آخر میں ریلیز کیا گیا تھا، فلم کی کہانی چار نوجوانوں کے گرد گھومتی ہے جو اپنے بڑے بڑے خوابوں کو پورا کرنے کے جتن کررہے ہوتے ہیں مگر انہیں خوابوں کی تکمیل کا راستہ نہیں ملتا۔


سینسرزبورڈ کی طرف سے لفنگے کی ریلیز پر پابندی کے فیصلے پر فلم کے ہدایات کار عبدالخالق خان نےمایوسی کاا ظہار کرتے ہوئے کہا کہ بورڈ فلم کے متنازعہ ڈائیلاگز کو نکالنے کا اختیار تھا مگر بورڈ نے ایسا کرنے کے بجائے فلم پر ہی پابندی عائد کردی۔

چیئرمین فلم سینسرز بورڈ نےاس فیصلے کے حوالے سے تفصیلات بتاتے ہوئےکہا کہ فلم میں بہت سارے فحش الفاظ اور ذومعنی جملوں اور جنسیت سے بھرے لفظوں کا استعمال کیا گیا ہے۔
 
Advertisement

k.a.kiani

Minister (2k+ posts)
I am not a saint but if our youth will watch this then what do you expect them to become. Those who watched movies in 20 years ago, they will never want to watch this content. The only people who will watch such movies are those who are between 18 to 30 years old.
 

nutral is munafek

Voter (50+ posts)
Youtube era ,everything is in fingertips, institution’s responsibility is to find a way to promote and encourage the industry to compete the market,not to be a neutral like donkey ,without any thinking kick everything out . Grow yourself don’t be dumb(CBFC).
 
Sponsored Link