ڈیبیو کرنے والے نوجوان کیوی کھلاڑی نے بھارتیوں کے ارمان خاک میں ملا دیے

13innz.jpg

بھارت اور نیوزی لینڈ کے درمیان کانپور میں کھیلے جانے والا پہلا ٹیسٹ میچ سنسنی خیز لمحات میں داخل ہونے کے بعد بغیر کسی نتیجہ کے ختم ہوگیا۔

کانپور ٹیسٹ میں نیوزی لینڈ نے پانچویں روز کے اختتام تک 284 رنز کے تعاقب میں 9 وکٹوں کے نقصان پر 165 رنز بنائے اور بھارت کامیابی سے ایک وکٹ دور رہا۔

نیوزی لینڈ کی ٹیم کھیل کے آخری روز بھارت کی جانب سے دیئے گئے 284 رنز کے تعاقب میں بیٹنگ جاری رکھے ہوئے تھی اور 90 سکور پر صرف دو کھلاڑی آوٹ تھے۔ وقت کی کمی کے باعث میچ ڈرا ہوتا دکھائی دے رہا تھا لیکن پھر اچانک سے پانسہ پلٹا اور بھارت نے دھڑا دھڑ مہمان ٹیم کی وکٹیں گرانا شروع کر دیں تاہم آخری کھلاڑی نیوزی لینڈ کو بری شکست سے بچا گیا اور وقت ختم ہونے سے میچ بے نتیجہ اختتام کو پہنچ گیا۔


نیوزی لینڈ کے کھلاڑی راچن رویندر نے وکٹ روکنے کی بھر پور کوشش کی اور وہ کامیاب بھی رہے انہوں نے اپنی شاندار مزاحمتی اننگز میں 91 گیندوں پر 18 رنز بنائے۔

بھارت نے دوسری اننگز میں سات وکٹوں کے نقصان پر 234 رنز بنا کر اننگز ڈکلیئر کر دی تھی اور نیوزی لینڈ کو جیت کیلئے 284 رنز کا ہدف دیا تھا۔

بھارت کی جانب سے صرف شریاس ایئر نے بہتر ین کھیل پیش کرتے ہوئے 65 رنز بنائے، ان کے علاوہ ویریدھی مین ساہا نے 61 رنز کی اننگ کھیلی ان دونوں کے سوا کوئی اور کھلاڑی خاطرخوا کارکردگی نہ دکھا سکا۔

کیویز کی جانب سے ٹام لیتھام 52 رنز کے ساتھ سرفہرست رہے ، کپتان کین ولیمسن نے 24 اور ولیم نے 36 رنز بنائے ۔بھارت کی جانب سے جدیجا نے بہترین باولنگ کرتے ہوئے 4 کھلاڑیوں کو پولین پہنچایا جبکہ ایشون نے تین ، پاٹیل اور یادیو نے ایک ایک وکٹ حاصل کی ۔

اس سے قبل بھارت نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کا فیصلہ کیا اور پوری ٹیم345 رنز بنانے میں کامیاب ہوئی جس میں سب سے اہم کر دار ’ شریاس لیئر ‘ نے 105 رنز بنا کر ادا کیا ، ان کے علاوہ جدیجا اور شبمان گل نے نصف سینچریاں بنا کر ٹیم کو بڑا ٹوٹل بنانے میں مدد فراہم کی۔ اجنکیا رہانے نے 35 اور پوجارا نے 26 رنز کی اننگ کھیلی ۔ اوپن کرنے والے مینک اگروال 13 رنز بنانے میں کامیاب ہوئے تھے۔
 
Advertisement
Last edited:
Sponsored Link