بنی گالاسوتارہااور عوام مرگئی،پی ٹی آئی کےسابق سیکرٹری اطلاعات کی تنقید

10%D8%A7%DA%BE%D9%85%D8%A7%D8%AF%D8%AC%D8%A7%D9%88%D8%A7%D8%AF.jpg

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سابق سیکرٹری اطلاعات احمد جواد نے اپنی ہی حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بنی گالا سوتا رہا,عوام سردی سے مرتی گئی۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے سابق سیکرٹری اطلاعات احمد جواد نے ٹوئٹر پوسٹ میں کہا کہ درباری کاربن مونو آکسائیڈ کی طرح ہوتے ہیں جو لیڈر کو گہری نیند اور پھر موت تک لے جاتے ہیں۔بنی گالا سوتا رہا,عوام سردی سے مرتی گئی۔خدا کا شکر ہے کہ تاریخ گواہ رہے گی کہ میں عمران خان کے درباریوں میں شامل نہیں ہوا،عمران خان کو درباریوں کی نہیں،جگانے والوں کی ضرورت ہے۔


انہوں نے ایک اور ٹویٹ میں کہا کہ پی ٹی آئی کے دور میں کروڑ پتی اور ارب پتی بننے والے پی ٹی آئی کے منسٹروں اور لیڈروں کی فہرست بنا رہا ہوں۔ریاست مدینہ میں انصاف اور احتساب سب کا ہو گا۔ادھر ترکی میں بھی کچھ کھرے ملے ہیں، تمام اوورسیز پاکستانیوں سے درخواست کہ اس نیک عمل میں مدد کریں۔


احمد جواد نے اپنے بیانیے کی تبدیلی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ بہت لوگ میرے بیانیے میں تبدیلی کی وجہ اور خاص طور پر پی ٹی آئی کی تنظیم تحلیل ہونے کے بعد میرے ردعمل کی وجہ جاننا چاہتے ہیں،میں ہر سوال کا جواب دے سکتا ہوں جو بھی تمیز کے دائرے میں ہو۔تو جلد آ رہا ہے میری وضاحت،میری وجوہات، بیانیہ کی تبدیلی پر۔ابھی تو پارٹی شروع ہوئی ہے۔


واضح رہے کہ 7 جنوری کو رات گئے مری میں شدید برفباری اور سیاحوں کے رش کی وجہ سے صورتحال سنگین ہوگئی تھی جس سے 23 افراد گاڑیوں میں پھنسے رہنے کے باعث انتقال کرگئے تھے۔
 
Advertisement

Landmark

Minister (2k+ posts)
10%D8%A7%DA%BE%D9%85%D8%A7%D8%AF%D8%AC%D8%A7%D9%88%D8%A7%D8%AF.jpg

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے سابق سیکرٹری اطلاعات احمد جواد نے اپنی ہی حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ بنی گالا سوتا رہا,عوام سردی سے مرتی گئی۔

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کے سابق سیکرٹری اطلاعات احمد جواد نے ٹوئٹر پوسٹ میں کہا کہ درباری کاربن مونو آکسائیڈ کی طرح ہوتے ہیں جو لیڈر کو گہری نیند اور پھر موت تک لے جاتے ہیں۔بنی گالا سوتا رہا,عوام سردی سے مرتی گئی۔خدا کا شکر ہے کہ تاریخ گواہ رہے گی کہ میں عمران خان کے درباریوں میں شامل نہیں ہوا،عمران خان کو درباریوں کی نہیں،جگانے والوں کی ضرورت ہے۔


انہوں نے ایک اور ٹویٹ میں کہا کہ پی ٹی آئی کے دور میں کروڑ پتی اور ارب پتی بننے والے پی ٹی آئی کے منسٹروں اور لیڈروں کی فہرست بنا رہا ہوں۔ریاست مدینہ میں انصاف اور احتساب سب کا ہو گا۔ادھر ترکی میں بھی کچھ کھرے ملے ہیں، تمام اوورسیز پاکستانیوں سے درخواست کہ اس نیک عمل میں مدد کریں۔


احمد جواد نے اپنے بیانیے کی تبدیلی کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ بہت لوگ میرے بیانیے میں تبدیلی کی وجہ اور خاص طور پر پی ٹی آئی کی تنظیم تحلیل ہونے کے بعد میرے ردعمل کی وجہ جاننا چاہتے ہیں،میں ہر سوال کا جواب دے سکتا ہوں جو بھی تمیز کے دائرے میں ہو۔تو جلد آ رہا ہے میری وضاحت،میری وجوہات، بیانیہ کی تبدیلی پر۔ابھی تو پارٹی شروع ہوئی ہے۔


واضح رہے کہ 7 جنوری کو رات گئے مری میں شدید برفباری اور سیاحوں کے رش کی وجہ سے صورتحال سنگین ہوگئی تھی جس سے 23 افراد گاڑیوں میں پھنسے رہنے کے باعث انتقال کرگئے تھے۔
ڈونکی کنگ کے ساتھ مفاد پرستوں کا ایک ٹولہ ہے ۔۔ جب عہدے انکے پاس ہوتے ہیں بے شرمی اور بے غیرتی کے ساتھ توسب ٹھیک نظر آ رہا ہوتا ہے اور جب ان سے کوئی عہدہ لے لیا جاتا تو پھر سادھو بن جاتے ہیں۔​
 
Sponsored Link