خدا حافظ! اب میری بس ہو چکی ہے،بھارتی مسلم کامیڈین منور فاروقی دلبرداشتہ

mnr.jpg


بھارت کے مشہور سٹینڈاپ کامیڈین منور فاروقی لمبے عرصے سے انتہا پسند ہندوؤں کے نشانے پر ہیں، ہندوتوا کے پیروکاروں نے کامیڈین کو تنگ کرنے کی انتہا کر دی کہ انہیں آخرکار سوشل میڈیا پر پیغام جاری کرنا پڑا جسے دیکھ کر ان کے مداح افسردہ ہو گئے۔

کامیڈین منور فاروقی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر بتایا کہ بنگلور میں ہونے والا شو پولیس نے منسوخ کردیا، جس پر انہوں نے اپنے جذباتی پیغام میں کہا کہ اب ان کی بس ہو گئی ہے۔ منور نے خدا حافظ کے ساتھ پیغام لکھا کہ نفرت جیت گئی، فنکار ہار گیا۔ پولیس نے یہ اقدام ہندو انتہا پسند تنظیموں کی جانب سے احتجاج کے بعد اٹھایا۔

انھوں نے یہ بھی لکھا کہ مجھے اس مذاق کے لیے جیل میں ڈالنا جو میں نے کیا ہی نہیں تھا اور وہ شو منسوخ کرنا جس میں کوئی مسئلہ نہیں، نا انصافی ہے۔ منور نے مزید لکھا ہے کہ ان کی نفرت کا بہانہ بن گیا ہوں، ہنسا کر کتنوں کا سہارا بن گیا ہوں، ٹوٹنے پر ان کی خواہش پوری ہو گی۔ صحیح کہتے ہیں میں ستارہ بن گیا ہوں۔


مشہور کامیڈین نے آخر میں لکھا ہے کہ میرا خیال ہے یہ اختتام ہے۔ میرا نام منور فاروقی ہے۔ وہ میرا وقت تھا اور آپ دیکھنے والے زبردست تھے۔ خدا حافظ! اب میری بس ہو چکی ہے۔ یاد رہے کہ 29 سالہ مسلمان کامیڈین کو پچھلے دو ماہ کے دوران انتہا پسندوں کی وجہ سے اپنے 12 شو منسوخ یا ملتوی کرنے پڑے۔

یہی نہیں اس سے پہلے منور کو ہندو انتہا پسندوں کی وجہ سے گرفتار بھی کیا جاچکا ہے۔

 
Advertisement
Sponsored Link