سانحہ سیالکوٹ میں ورکرز کو اکسانے والے ملزم کا پتہ چل گیا

sialkot-mulzim.jpg


سانحہ سیالکوٹ کی تحقیقات میں اہم پیشرفت ہوئی ہے، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سیالکوٹ عمر سعید ملک نے بتایا کہ فیکٹری میں ہجوم کی طرف سے سری لنکن منیجر پریانتھا کمارا کے قتل کیلئے ورکرز کو اکسانے والے اور ہجوم کو اکٹھا کرنے والا ملزم بے نقاب ہوگیا ہے۔

دنیانیوز کے مطابق ڈی پی او نے بتایا کہ پریانتھا کمارا پر توہین مذہب کا الزام لگا کر قتل کرنے کیلئے صبور بٹ نے ورکرز کو اشتعال دلایا اور ہجوم کو اکٹھا کیا،فیکٹری کے اسٹچنگ یونٹ کے اسٹیچر صبور بٹ نے ورکرز کو مشتعل کیا، پریانتھا کےخلاف ہجوم کو اکٹھا کرنے میں وہ ملوث ہے، واقعے سے پہلے پریانتھا نے اسٹیچنگ ہال کا دورہ کیا تھا، دونوں کی تصویر بھی مل گئی ہے۔

ڈی پی او سیالکوٹ نے بتایا کہ ملزم صبور بٹ اس وقت جسمانی ریمانڈ پر ہے،تفتیش جاری ہے جبکہ دیگر مرکزی ملزمان کے کردار کا تعین بھی کیا جارہا ہے،پولیس نے کارروائی کرکے مزید آٹھ مرکزی ملزمان گرفتارکرلیے ہے۔

پولیس کے مطابق ملزمان کو سی سی ٹی وی اورموبائل کالز ڈیٹا کی مدد سےگرفتار کیا گیا ہے، سانحے میں اب تک چونتیس مرکزی ملزمان کو گرفتار کیا جاچکا ہے ،گرفتارملزمان کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا جارہا ہے ، وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کا کہنا ہے ذمہ دار قانون کے تحت سخت سزا کے حقدار ہیں۔

 
Advertisement

MADdoo

Minister (2k+ posts)
ye abi India ka agent sabit hoga. RAW se taluk b hoga iska.

hamara to kasoor ni, jo karwa reha Modi karwa reha.
 

The Sane

Chief Minister (5k+ posts)
sialkot-mulzim.jpg


سانحہ سیالکوٹ کی تحقیقات میں اہم پیشرفت ہوئی ہے، ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر سیالکوٹ عمر سعید ملک نے بتایا کہ فیکٹری میں ہجوم کی طرف سے سری لنکن منیجر پریانتھا کمارا کے قتل کیلئے ورکرز کو اکسانے والے اور ہجوم کو اکٹھا کرنے والا ملزم بے نقاب ہوگیا ہے۔

دنیانیوز کے مطابق ڈی پی او نے بتایا کہ پریانتھا کمارا پر توہین مذہب کا الزام لگا کر قتل کرنے کیلئے صبور بٹ نے ورکرز کو اشتعال دلایا اور ہجوم کو اکٹھا کیا،فیکٹری کے اسٹچنگ یونٹ کے اسٹیچر صبور بٹ نے ورکرز کو مشتعل کیا، پریانتھا کےخلاف ہجوم کو اکٹھا کرنے میں وہ ملوث ہے، واقعے سے پہلے پریانتھا نے اسٹیچنگ ہال کا دورہ کیا تھا، دونوں کی تصویر بھی مل گئی ہے۔

ڈی پی او سیالکوٹ نے بتایا کہ ملزم صبور بٹ اس وقت جسمانی ریمانڈ پر ہے،تفتیش جاری ہے جبکہ دیگر مرکزی ملزمان کے کردار کا تعین بھی کیا جارہا ہے،پولیس نے کارروائی کرکے مزید آٹھ مرکزی ملزمان گرفتارکرلیے ہے۔

پولیس کے مطابق ملزمان کو سی سی ٹی وی اورموبائل کالز ڈیٹا کی مدد سےگرفتار کیا گیا ہے، سانحے میں اب تک چونتیس مرکزی ملزمان کو گرفتار کیا جاچکا ہے ،گرفتارملزمان کو انسداد دہشت گردی کی عدالت میں پیش کیا جارہا ہے ، وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار کا کہنا ہے ذمہ دار قانون کے تحت سخت سزا کے حقدار ہیں۔

اگر مل گیا ہے تو دیکھتے ہیں کہ لوہار ہائیکورٹ اس کے چوتڑوں میں بانس دیتی ہیں یا حسبِ سابق اپنے۔
 

Hussain1967

Minister (2k+ posts)
اگر مل گیا ہے تو دیکھتے ہیں کہ لوہار ہائیکورٹ اس کے چوتڑوں میں بانس دیتی ہیں یا حسبِ سابق اپنے۔
TLP jaisay monster say agreements ( April 2021, October 2021) LHC ya SCP nay nahin kiyay thay balkeh moujooda hukoomat nay hi kiay thay. Issi tarah TLP ko un-ban moujooda hukoomat nay kia hai, LHC nay nahin. This doesn’t, however, mean that Our Courts are ideal.
 

The Sane

Chief Minister (5k+ posts)
TLP jaisay monster say agreements ( April 2021, October 2021) LHC ya SCP nay nahin kiyay thay balkeh moujooda hukoomat nay hi kiay thay. Issi tarah TLP ko un-ban moujooda hukoomat nay kia hai, LHC nay nahin. This doesn’t, however, mean that Our Courts are ideal.
تو جناب آپ کی ترقی پسند پارٹی معاہدے کو عدالت میں چیلنج کر دے
 

Curious_Mind

MPA (400+ posts)
TLP jaisay monster say agreements ( April 2021, October 2021) LHC ya SCP nay nahin kiyay thay balkeh moujooda hukoomat nay hi kiay thay. Issi tarah TLP ko un-ban moujooda hukoomat nay kia hai, LHC nay nahin. This doesn’t, however, mean that Our Courts are ideal.
اگر تُم صحیح کہ رہے ہو تو پھر فکر کی بات نہیں ہے، لاہور ہائی کورٹ انکو پھانسی کی سزا سُنائی گی اگر چھوٹی عدالت نے سزا سُنائی تو اس کو قائم رکھے گی۔
 
Sponsored Link