کروز شپ کو تفریح کا ذریعہ بنانے کی امیدیں دم توڑ گئیں،حکومتی بیان آ گیا

biyaan-hk.jpg


کیا اٹلی کا 14منزلہ کروز شپ عوامی تفریح کا ذریعہ بن سکے گا؟

اٹلی سے خریدے جانے والے چودہ منزلہ پرتعیش سفری سہولتوں سے آراستہ عظیم الشان مسافر بردار بحری جہاز کو عوامی تفریح کا ذریعہ بنانے کی تمام امیدیں دم توڑ گئیں،کیونکہ پاکستان کی بندرگاہوں کی تاریخ میں لنگر انداز ہونے والے سب سے بڑا کروز شپ کو ٹکڑے ٹکڑے ہی کیا جائے گا۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق وزیر اعظم کے مشیر برائے بحری امور محمود مولوی نے کہا کہ معاہدے کے مطابق کروز شپ گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں اسکریپ میں بدلنے کے لیے لایا گیا ہے اور اسے فیری سروس کے لیے استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی۔

محمود مولوی نے بتایا کہ 1200 کمروں پر مشتمل اطالوی مسافر بردار جہاز اسکریپ کے لیے 2 ارب روپے میں خریدا گیا،معاہدے کے مطابق کروز شپ کو گڈانی شپ بریکنگ یارڈ میں صرف اسکریپ کے لیے لایا گیا ہے،اس کے کانٹریکٹ میں واضح الفاظ میں لکھا گیا ہے کہ یہ صرف اسکریپ کے لیے استعمال ہوگا۔

انہوں نے میری ٹائم اور پورٹ حکام کی جانب سے جہاز کو داخلے کی اجازت نہ دینے کی اطلاعات کو بے بنیاد قرار دیتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں کروز شپ چلانے کے لیے پالیسی موجود ہے جو بھی سرمایہ کار یا شپنگ کمپنی چاہے اس پالیسی کے تحت کراچی تا گوادر اور دبئی تک فیری سروس چلاسکتا ہے،حکومت نے اس پر دس سال کی ٹیکس چھوٹ بھی دی ہے، اس سلسلے میں پی این ایس سی کو باقاعدہ باہمی اشتراک کے ساتھ کام کرنے کی بھی اجازت دی گئی ہے۔

گڈانی شپ بریکنگ یارڈ کے 42نمبر گودی پر لنگر انداز ہونے والا شاندار کروزشپ 14 منزلوں پر مشتمل ہے جس میں آسائشوں اور سہولیات سے آراستہ 1411 کمرے ہیں۔ اس جہاز کو 1993 میں اٹلی کی ایک کمپنی نے بنایا تھا، نومبر 2011 میں اس جہاز کی تزئین و آرائش پر 90 ملین یورو خرچ کیے گئے تھے۔

اس کروز شپ میں 7 اسٹار ہوٹل، شاپنگ مالز، کیسینو، گیمنگ زون اور تین بڑے ہال رومز موجود ہیں۔کروز شپ آرٹ کے نادر نمونوں، منفرد فن پاروں اور آرائشی اشیاء کا بھی ذخیرہ ہے۔ جہاز میں جدید مشینوں پر مشتمل ہیلتھ جمنازیم دیکھنے کے قابل ہے۔ جہاز کے ڈائینگ ہالز سیون اسٹار ہوٹلوں کی طرح آراستہ ہیں جو آنے والے کچھ عرصہ میں ایشیاء کی سب سے بڑی کباڑی مارکیٹ شیرشاہ میں فروخت ہوتے نظر آئیں گے۔

 
Advertisement

The wizard

MPA (400+ posts)
Lol so the owner brought ship for turn in to scrap and media doing negative reporting simple hai Jo aisi cheezain laity hai har Cheez ko behly hi the kr lety hai
 

pcdoc24x7

Minister (2k+ posts)
Folks... why do planes, trains, ships etc. Get scrapped? Correct answer when they have reached a certain age and deemed dangerous. So WTH should the owner try to use it as a cruise ship endangering human lives? Kissi ka screw waqai dheela hai. Lol.
 

AbbuJee

Senator (1k+ posts)
The person who floated this idea should check his/her mental state. This is an old crumbling ship that is no longer sail worthy. Its destined for scrap. If it was financially viable to convert into something for entertainment, the parent company had already done so. They have used it to its limit and now it would cost fortune just to make it safe for tourism/entertainment purpose, and for what 10,20 or 50Rs ticket?
 
Sponsored Link