شہباز شریف ہکابکا ہیں کہ فوج کیساتھ کھڑے ہوں یا محسن داوڑ،اختر مینگل کےساتھ

2shehbazdawarmengalgfouj.jpg

معروف اینکر پرسن کامران خان نے اختر مینگل کے کشیدہ سیاسی صورتحال پر کیے گئے ٹویٹ پر رد عمل میں کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف پریشان ہیں کہ وہ فوج کا ساتھ دیں یا اتحادیوں کا۔

کامران خان نے اپنے پیغام میں کہا کہ شہباز شریف کے اتحادی سردار اختر مینگل نے مخلوط حکومت کے قیام کا پہلا ہفتہ مکمل ہونے پر اس اتحاد سے رخصتی اختیار کرنے کی تیاری کرلی ہے۔

انہوں نے کہا کہ محسن داوڑ کی طرح شکایات کی توپوں کا رخ فوج ہے اور بیچارے وزیر اعظم شہباز شریف ہکا بکا ہیں کہ ہماری فوج کے ساتھ کھڑے ہوں یا محسن داوڑ اور اختر مینگل کے ساتھ۔


انہوں نے یہ تبصرہ اختر مینگل کی ایک ٹویٹ کیا جس میں ان کی جانب سے 6 بلوچ شہریوں کے قتل کا الزام ایف سی پر لگایا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایسے حالات میں وہ ایسی حکومت کا حصہ کیسے بن سکتے ہیں۔

بی این پی رہنما نے کہا کہ وہ واضح کر دینا چاہتے ہیں کہ ان حالات میں وہ بالکل حکومت کا حصہ نہیں بن سکتے۔
 
Advertisement

Eyeaan

Chief Minister (5k+ posts)
وہ سب باجے کی نورا کشتی تھی ۔اگر یاد ہو تو داوڑ وغیرہ کے خلاف امیدوار نہ کھڑا کرنے کا مطالبہ باجے کا ہی تھا ۔۔
۔ باجا پہلے دن سے عدالتون سے مجرمووں کو ریلیف دلا کر اور فوجی جوان کی ناک کاٹ کاٹ کر اپنا گھریلو اور سسرالی جہاد کر رہا ہے ۔
 

thinking

Prime Minister (20k+ posts)
Mulk ko sab ne aik tuaif ki trah bana dia ha..Jis kanjar..dalal MC ka dil karta ha ussay nochnay lagta ha...
 

Anemex

Councller (250+ posts)
O BAS KERDO YE DRAMY BAZI, YE SARY AIK HAIN, INCLUDING GENERALS AND JUDGES, MIL KER KHAIL RAHY HAIN AUR AWAM KO BEWAQOF BANANY KI NAKAM KOSHISH KER RAHY HAIN KION K YE SAB AB EXPOSE HO CHUIKY HAIN !
 

such bolo

Chief Minister (5k+ posts)
I think mengal dawar ali wazir bajwah and SS are on one page.

They all are hand gloves with each other.
 
Sponsored Link